پاکستانتازہ ترین

ہم دوغلے لوگ نہیں امریکی صدر کے سامنے بیٹھ کر ڈرون حملوں کے خلاف بات کی، وزیراعظم

nawazاسلام آباد(بیوروچیف)وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ امریکی ڈرون حملے کی وجہ سے طالبان سے مذاکرات کی تیاری دھری کی دھری رہ گئی ، ڈرون پر دوغلی پالیسی نہیں، امریکا سے حقیقی احتجاج کیا۔اسلام آباد میں قومی مشاورتی کانفرنس، پاکستان وژن 2025 سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نوازشریف نے کہا ہے کہ ڈرون حملے پاکستان کے ساتھ زیادتی اور ظلم ہے، امریکی انتظامیہ کو آگاہ کرنے کے باوجود ڈرون حملوں سے تکلیف پہنچی ہے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ ڈرون حملوں کا معاملہ ہرفورم پراٹھایا ہے، اوباما کو بھی کہا کہ ڈرون حملے نہیں ہونے چاہئیں، امریکا بھی جانتا ہے کہ موجودہ حکومت کا دوہرا معیارنہیں، اوباما سے کہا کہ ڈرون حملے قابل قبول نہیں ہیں۔ نواز شریف نے کہا کہ ڈرون سے متعلق کہا گیا کہ امریکا میں پاکستان کا احتجاج رسمی تھا۔ وزیر اعظم نے کہا کہ دہشت گردی کے مقدمات کی سماعت کیلئے ججز ماسک پہن کرکیس سن سکتے ہیں، دہشت گردی کی کارروائیوں میں ملوث افراد کا دوسرے صوبے میں ٹرائل ہوسکتا ہے،دہشت گردی کے کیسز کے فیصلے کئی کئی سال تک نہیں ہوتے۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردی اور فرقہ واریت میں ملوث لوگوں کو کیفرکردارتک پہنچایا جائیگا، دہشت گردی کیلئے لاوٴڈ اسپیکرکا استعمال ہورہا ہے، اس کو بند ہونا چاہئے، دہشت گردی اور شدت پسندی کا ہمیشہ کے لیے قلع قمع ہونا چاہئے۔ کراچی آپریشن سے متعلق وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ کراچی میں ہزاروں مجرم پکڑے گئے ہیں، مجرموں کواگر سزا نہیں ملے گی تو تعداد 10 گنا مزید بڑھ جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ چین کے تعاون سے سول نیوکلیئرپاور پروجیکٹ کا افتتاح 26 نومبرکو کروں گا۔ انہوں نے کہا کہ نوجوانوں کو آسان شرائط پرقرضہ فراہم کریں گے۔وزیر اعظم نے کہا کہ بھارت، افغانستان کے ساتھ اچھے تعلقات بنانا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بجلی کے مسئلے کو حل کرنے میں کم سے کم 4 سال لگیں گے۔

یہ بھی پڑھیں  مصطفی آباد: بابا علیم شکیل کی یاد میں تعزیتی ریفرنس کا اہتمام

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker