تازہ ترینعلاقائی

بہاول نگر:غریب محنت کش والدین کا اکلوتا سہارا 28 سالہ نوجوان حکومتی عدم توجہ کاشکار

bhawalnagarبہاولنگر(رانا فیصل رحمن سے) بہاول نگر غریب محنت کش والدین کا اکلوتا سہارا 28 سالہ نوجوان حکومتی عدم توجہی ،معا شرتی بے حسی کا شکار گذشتہ 12سال سے بستر پر زندہ لاش بنا ، کسی مسیحا کا منتظر تفصیلات کے مطابق بہاولنگرکے نواحی چک نمبر 118 مراد میں غریب بوڑھے محنت کش عبدالشکور کا جواں سالہ بیٹا مقبول معذوری کے باعث گذشتہ 12سال سے بستر پر زندہ لاش بنا ، کسی مسیحا کا منتظر ہے جو اس کی قابل رحم حالت پر ترس کھا کر اس کے علاج کرواکر اسے اپنے بوڑھے غریب والدین کی کفالت کے قابل بنا سکے۔حسرت اور بے بسی کی تصویر بنا مقبول احمد 12سال پہلے ٹریفک حادثہ کا شکار ہوا ،جس سے اس کی ریڑھ کی ہڈی میں چوٹ لگی اور یوں بوڑھے والدین کی امیدوں کا مرکزگھر کا واحد کفیل چلنے پھرنے حرکت کرنے سے معذور ہو کر نہ صرف بستر سے جا لگا بلکہ ایک زندہ لاش بن کر رہ گیا، کیونکہ وہ چل پھر سکتا ہے نہ کروٹ لے سکتا ہے ، اس کا سارا جسم مفلوج ہو کر رہ گیا ہے ،دس برس سے زائد عرصہ بستر پر لیٹے رہنے سے جسم پر بیڈ سولز ہوگئے ہیں ،جوشدید اذیت و تکلیف کا باعث ہیں۔ بوڑھے والدین نے گھر کا سامان بیچ بیچ کر اس کا ممکنہ حد تک علاج کروایا،یہاں تک کے گھر کا سارا سامان بک گیا اور نوبت فاقوں تک آپہنچی ،لیکن مقبول کو کوئی خاص افاقہ نہ ہوا ، کیونکہ ڈاکٹرز کے مطابق مقبول کا علاج انڈیا میں ممکن ہے ،لیکن غریب محنت کش میں علاج کروانے کی استطاعت نہیں ہے،معاشرتی و حکو متی بے حسی کا شکار بد نصیب خاندان تمام حکومتی در کھٹکھٹا چکا ہے ،لیکن ہر طرف سے مایوسی اور سردمہری کے سوا کچھ نہ ملا۔زندہ لاش اور حسرت کی تصویر بنا مقبول اور اسکے غم کے مارے بوڑھے والدین عرصہ دراز سے حکومتی توجہ یا کسی اور مسیحا کی نظر کرم کے منتظر ہیں۔

یہ بھی پڑھیں  ایمانداری کامیابی ہے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker