تازہ ترینعلاقائی

پھولنگر:اسلامی جمعیت طلبا کے مقامی رہنماؤں کی پنجاب یونیورسٹی میں پولیس گردی ،تشدد اورجھوٹے مقدمات کی شدیدمذمت

ijtبھائی پھیرو(نامہ نگار) سرائے مغل ۔اسلامی جمعیت طلبا کے مقامی رہنماؤں کی طرف سے پنجاب یونیورسٹی میں پولیس گردی ،تشدد اور جھوٹے مقدمات کی شدید مزمت۔حکمران جھوٹے الزامات لگاکرطلباکی گرفتاریوں سے باز رہیں وگرنہ ضلع قصور کے تمام کالجوں کے طلبا سڑکوں پرسراپا احتجاج بن جائیں گے۔طالبعلم رہنماؤں کی دھمکی ،تفصیلات کے مطابق اسلامی جمعیت طلبا کے مقامی اور ضلعی رہنماجن میں نعمان ،عثمان،احمد جمال،احمد عباس،نزاکت علی،وقاص احمد،کعب عبداللہ،نعیم ناصر،محمد معاذ ،خالد نزیراور دیگر شامل تھے گاؤں کچہ پکا کے نواحی کوٹ میں جمع ہوئے اجلاس سے خطاب کرتے عبدالناصر چوہدری نے کہا کہ پنجاب یونیورسٹی کی کرپٹ انتظامیہ اور موجودہ حکومت پنجاب کی ملی بھگت سے پولیس نے پنجاب یونیورسٹی کے ہوسٹلوں پر چھاپے مار کر نہتے طلبا پر تشدد کی انتہا کردی ،ڈکیتی ،منشیات اور دہشت گردی کے جھوٹے مقدمات قائم کرکے اسلامی جمعیت طلبا کی قیادت کو گرفتار کرکے جیل میں بند کردیا۔پورا پنجاب ڈاکوؤں ،منشیات فروشوں،اور دہشت گردوں کی جنت بن چکاہے ،حکمران اور پولیس اصلی ڈاکوؤں،لٹیروں ،منشیات فروشوں،اور دہشت گردوں کو تو پکڑ نہیں سکے اب بے گناہ طلبا پر جھوٹے الزامات لگا کر اپنی کرپشن ،نااہلی اور تعلیم دشمن پالیسیوں سے عوام کی توجہ ہٹانا چاہتے ہیں۔حکمرانوں کو یاد رکھنا چاہیے کہ ماضی میں بھی حکمرانوں نے ریاستی دہشت گردی کرکے سید مودودی کے اسلامی جمعیت کے قافلے کو دبانا چاہا مگر تاریخ نے ثابت کیا کہ ظالم حکمران مٹ گئے مگر نظریاتی قافلہ بڑھتا ہی چلا گیا۔انہوں نے حکمرانوں کو وارننگ دی کہ وہ گرفتارطلباکو فوری رہا کردیں اور جھوٹے مقدمات واپس لیں وگرنہ ضلع قصور کے طلبا بھی سڑکوں پر سراپا احتجاج بن جائیں گے۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button