تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیرو کے شہری حلقےمیں گندگی،ناقص صفائی اورناجائز تجاوزات پر بلدیہ افسران کے خلاف سراپا احتجاج بن گئے

unnamed (2)بھائی پھیرو(نامہ نگار) بھائی پھیرو کے شہری حلقے گندگی،ناقص صفائی اورناجائز تجاوزات پر بلدیہ افسران کی بے حسی کے خلاف سراپا احتجاج بن گئے۔ ملتان روڈ سمیت شہر بھر کے گلی محلوں میں جگہ جگہ گندگی کے ڈھیر، سڑکوں وبازاروں میں ناجائز تجاوزات قائم،میونسپل کمیٹی بھائی پھرو کا عملہ دیہاڑیاں لگانے تک محدود۔خادم اعلی پنجاب سے نوٹس لینے کا مطالبہ ۔تفصیلات کے مطابق۔ بھائی پھیرو کے شہری حلقے گندگی،ناقص صفائی اورناجائز تجاوزات پر بلدیہ افسران کی بے حسی کے خلاف سالہا سال سے سراپا احتجاج بنے ہوئے ہیں مگر ان کی کوئی نہیں سنتا۔ ملتان روڈ سمیت شہر بھر کے گلی محلوں میں جگہ جگہ گندگی کے ڈھیر، سڑکوں وبازاروں میں ناجائز تجاوزات کی وجہ ٹریفک گھنٹوں جام رہتی ہے۔مگر،میونسپل کمیٹی بھائی پھرو کا عملہ ناجائز تجاوزات کرنے والوں سے منتھلیاں لیکر دیہاڑیاں لگانے تک محدود ہے ملتان روڈ کے اوپرریڑھی بانوں ،خوانچہ فروشوں،ٹیکسی ،کار ،موٹر سائکل رکشہ اور ٹرک کے ناجائز اڈوں ودیگر نے نہ صرف قبضہ جما رکھا ہے بلکہ یہی ریڑھی بان و خوانچہ فروش گلا سڑا پھل و دیگر گندگی اسی ملتان روڈ پر پھینک کر بڑے بڑے گندگی کے ڈھیر لگاتے ہیں۔ اس سلسے میں صحافیوں کی ایک ٹیم نے شہر کے باسیوں کے تاثرات لیے ۔جماعت اسلامی کے رہنمااور حلقہ اپی پی 184کے امیدوار سردار نور احمد ڈوگر نے کہا کہ بھائی پھیرو کی حالت ذار پر رونا آتا ہے کیونکہ شہر اور بازار سے گزرنا نہ صرف محال ہی ہوچکا ہے بلکہ ناممکن بھی ہوتا جارہا ہے جس کی وجہ صرف یہ ہے کہ بلدیہ بھائی پھیرو کا نا اہل عملہ صرف دفتروں میں بیٹھا گپیں ہانکنے اور دیہاڑیاں لگانے میں مصروف رہتا ہے جبکہ شہر بھر میں ناجائز تجاوزات قائم ہیں جنہیں کوئی پوچھنے والا ہی نہیں ہے۔انجمن تاجران کے صدر حاجی محمد تنویر مدنی نے کہا کہ ملتان روڈ پر میں ناجائز رکشہ و ویگن سٹینڈ تو پہلے سے ہی قائم ہیں مگر ساتھ ہی ریڑھی بانوں و خوانچہ فروشوں نے بھی بلدیہ بھائی پھیروکے عملہ کی مہربانی سے سڑک پر قبضہ جما لیا ہے جس کی وجہ سے گھنٹوں ٹریفک کی لمبی قطاریں لگی رہتی ہیں ۔شہرام خاں فاؤنڈیشن کے چیئرمین رانا احمد حسن خاں نے کہا کہ ناجائز تجاوات اور گندگی بلدیہ کے ملازمین پر الزام تو بہت چھوٹی سی بات ہے جبکہ اس کے اصل ذمہ داران تو ارکان اسمبلی ہیں۔مارکیٹ کمیٹی بھائی پھیروکے چیئرمین سید بلال حسین شاہ نے کہا کہ سپیکر پنجاب اسمبلی رانا محمد اقبال خاں نے بیشمار ترقیاتی کام کروائے ہیں اور رانا محمد حیات خاں نے بھی اپنے سابقہ دور میں بیشمار ترقیاتی کام کروائے اور اب پھر رانا محمد حیات خاں ایم این اے ہیں اور انشا ء اللہ اب پھر بیشمار ترقیاتی کام ہونگے جبکہ ناجائز تجاوزات و گندگی کے حوالہ سے سید بلا ل حسین شاہ نے کہا کہ ملتان روڈ پر جگہ جگہ گندگی کے ڈھیر اور ناجائز تجاوزات کا ذ مہ دار صرف ٹی ایم او ہے۔ایڈوکیٹ رانا محمد عتیق خاں نے کہا کہ بھائی پھیرومیں ناجائز تجاوزات اور ٹریفک کی بد نظمی و ٹیکسی سٹینڈ والوں کا ملتان روڈ کو بطور اڈا استعمال کرنا ٹی ایم او پتوکی اور ٹریفک پولیس بھائی پھیرو کی بھتہ خوری کا نتیجہ ہے اگر ٹی ایم او پتوکی اپنی ڈیوٹی پوری کرے اور ٹریفک پولیس والے شہر بھائی پھیرومیں ٹریفک کو کنٹرول کریں بجائے اس کے کہ سنسان سڑکوں پر ناکے لگا کر لوٹنا اور شہر سے رکشہ ،ٹیکسی سٹینڈ بسوں و ویگنوں سے بھتہ خوری کریں بصورت دیگر جنگل کا قانون نافذالعمل ہے اور رہے گاحکام بالا ان معاملات کا سنجیدگی سے مطالعہ کریں اور وزیر اعلیٰ پنجاب کے ویثرن کرپشن سے پاک پنجاب کو پورا کریں تو کوئی وجہ نہیں کہ بھائی پھیرو ہی نہیں بلکہ انتظامیہ کے زیر ڈیوٹی علاقے بھی کرپشن سے پاک نہ ہوں شہری راؤ ر محمدراشد نے کہا کہ میرا میڈیکل سٹور ملتان روڈ پر واقع ہے مگر میرے سٹور کے اردگرد ناجائز تجاوزات اور رکشہ سٹینڈ ہونے کی وجہ سے راستہ بند ہوچکا ہے جس کے باعث آنے والے مریضوں اور مریضوں کے لواحقین کو کافی حد تک پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔شہری محمد اعظم نے کہا کہ بازار اس قدر تنگ ہوچکا ہے کہ بازار سے گزرنا ایک معرکہ سے کم نہیں جبکہ بازار تنگ ہونے کی وجہ صرف بازار کے وسط میں لگے ہوئے پھٹے اور دوکانوں کے آگے بنے ہو ئے تھڑے ہیں ۔
صحافیوں نے جب اسلسلہ میں شہر کا وزٹ کیا تو معلوم ہوا کہ مین ملتان روڈ جوکہ کچھ ماہ پہلے کروڑوں روپے کی لاگت سے تعمیر ہوئی تھی وہ جگہ جگہ سے ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہوچکی ہے اورروڈ پر جگہ جگہ گندگی کے ڈھیر لگے ہو نے کے ساتھ ساتھ ریڑھی بانوں ،خوانچہ فروشوں، سبزی فروشوں نے بھی قبضہ جما رکھا ہے اور رہی سہی کسر رکشہ سٹینڈ اور بس و ویگن سٹینڈ والوں نے نکال رکھی ہے جس کے باعث شہر کا نہ صرف حسن ہی تباہ ہوچکا ہے بلکہ شہر اور بازاروں سے گزرنا بھی ناممکن ہوتا جارہا ہے۔
یہاں پر قابل ذکر بات یہ بھی ہے کہ بلدیہ بھائی پھیروکا چارج ایسے شخص کو سونپا گیا ہے جو کہ اس کے اہل ہی نہیں ہے کیونکہ بلدیہ پتوکی کا پہلے سے ہی محمد شفیع انچارج ہے اور اوپر سے ستم ظریفی کا عالم یہ ہے کہ اُسی شخص کو بلدیہ بھائی پھرو کا بھی ایک عرصہ سے چارج دے رکھا ہے جسے شائد یہ بھی نہ پتہ ہو کہ بلدیہبھائی پھیرو میں کتنے ملازمین اور کون کون سے ملازمین کام کر رہے ہیں جبکہ باوثوق ذرائع کا تو کہنا ہے کہ موصوف کو تو کبھی ہم نے بلدیہ بھائی پھیروکے دفتر میں دیکھا ہی نہیں ہے،اس سلسلہ میں موقف جاننے کے لیے جب محمد شفیع سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے اپنے موقف میں کہاکہ میرے پاس بلدیہ پتوکی اور بلدیہ بھائی پھیرو کا چارج ہے اور میری عمر بھی کافی ہوچکی ہے لیکن اس کے باوجود میں کوشش کرتا ہوں کہ ڈیوٹی میں کوئی کوتاہی نہ برتوں مگر میری ذاتی مصروفیات کی وجہ سے کوئی نہ کوئی کوتاہی ہو ہی جاتی ہے اور میں ایک مرتبہ ضرور بلدیہ بھائی پھیرو کے دفتر میں آتا ہوں باقی رہی بات ناجائز تجاوزات کی تو وہ آپ ٹی او آر صاحب رابطہ کریں کیونکہ ناجائز تجاوزات اور صفائی ستھرائی کا کام میرے ذمہ نہیں ہے۔unnamed (1) unnamed

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button