تازہ ترینعلاقائی

80 فیصد عوام دو وقت کی روٹی کیلئے پریشان ہیں ،شوکت منیر

downloadگوجرانوالہ(نامہ نگار)موجودہ نظام سیاست کو تبدیل کئے بغیر پاکستان کو بحرانوں سے نجات نہیں مل سکتی ۔ 60 سال گزرنے کے باوجود پاکستانی قوم کے کروڑوں لوگوں کو باعزت جینے کاحق نہیں مل سکا۔ آج پاکستانی عوام معاشی ‘بدحالی اور مہنگائی کے طوفان جیسے مسائل سے دو چار ہیں ۔ 80 فیصد عوام دو وقت کی روٹی کیلئے پریشان ہیں ۔ آج حکومت کی تبدیلی کا نہیں بلکہ نظام کی تبدیلی کا وقت ہے ۔ان خیالات کا اظہار آل پاکستان مسلم لیگ کے ضلعی صدرچوہدری شوکت منیر نے گذشتہ روزحلقہ پی پی92 کی معروف سماجی ‘سیاسی شخصیت ڈاکٹر رفعت شیخ کو ضلعی سینئر نائب صدر خواتین ونگ کا نوٹیفکیشن دیتے ہوئے کیااور ان کی اے پی ایم ایل میں ہزاروں ورکر خواتین کی شمولیت کو نیک فعال قرار دیتے ہوئے امید ظاہر کی کہ ڈاکٹر رفعت شیخ پارٹی منشور کے مطابق اپنی بھرپور صلاحیتیں بروئے کار لائینگی۔ انہوں نے کہا کہ توانائی بحران ‘دہشت گردی اور لاقانونیت جیسے مسائل نے عوام کو ذہنی طور پر مفلوج کر دیا ہے ۔شوکت منیر نے کہا کہ حکمران اگر مہنگائی کو کنٹرول کر لیں تو معیشت خود بخود مضبوط ہو گی اور روزگار کے مواقع میسر آنیکے ساتھ ساتھ جرائم میں کمی واقع ہو گی ۔ عوام کی ترقی و خوشحالی کیلئے آل پاکستان مسلم لیگ کی پالیسیوں کو بڑے پیمانے پر پذیرائی حاصل ہو رہی ہے ۔ اور APML کی موثر پالیسیوں سے عوام میں اس کا گراف بلند ہو رہا ہے ۔اس موقعہ پر ڈاکٹر رفعت شیخ نے اپنے بیان میں کہا کہ ملکی ترقی میں خواتین کا بڑا کردار ہے اور یہ مردوں کے شانہ بشانہ کام کر رہی ہیں جو خوش آئند بات ہے ۔خواتین کو سیاسی عمل میں شامل کیے بغیر ملکی ترقی اور خوشحالی کا خواب شرم

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button