تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیرو:بلدیاتی انتخابات میں امیدواروں نے انتخابی مہم زوروشورسے شروع کردی

electionبھائی پھیرو(نامہ نگار) بدیاتی انتخابات میں حکمران لیگ کے امیدواروں نے انتخابی مہم زور شور سے شروع کردی ۔اپوزیشن کے امیدوار نئے وارڈوں کی حلقہ بندی اور نئی انتخابی فہرستیں نہ ملنے سے ذلیل و خوار ۔ کاغذات داخل کرنے کی تاریخ سرپر آگئی مگر حکمران لیگ کے اشاروں پرانتظامیہ سارے انتخابی عمل کو عوام سے خفیہ رکھ کر دھاندلی سے حکومت کے من پسند امیدواروں کو جتوانا چاہتی ہے۔اپوزیشن کا الزام ۔کئی امیدواروں نے انتظامیہ کے دفاتر کے باہر احتجاج کی دھمکی دے دی ۔تفصیلات کے مطابق اب الیکشن شیڈول کے مطابق کاغذات نامزدگی داخل کرنے میں صرف چند روز باقی ہیں اورحکمران لیگ کے امیدواروں نے الیکشن کمپین زور شور سے شروع کر رکھی ہے اور جگہ جگہ فلیکس اور اشتہارات لگا کر اور ڈیروں پر چائے اور کھانوں سے تواضع کرکے ووٹروں کی توجہ حاصل کرنے کی بھرپور کوشش کی جارہی ہے۔ دوسری طرف اپوزیشن کے امیدواروں کو ابھی تک نہ ہی نئے ترمیم شدہ بلدیاتی قوانین کا پتہ ہے ،نہ ہی نئی حلقہ بندیوں اور نہ ہی نئے وارڈوں کے مطابق نئی ووٹر فہرستوں کا کچھ پتہ ہے ۔پنجاب حکومت نے اپنے ہی بنائے قوانین میں ترامیم پہ ترامیم کرکے اسے نہایت پیچیدہ بنا دیا ہے ۔آئیدہ انتخابات میں حصہ لینے والے درجنوں افراد جن میں چوہدری محمد اصغر،چوہدری امتیاز احمد ،رحمت اللہ منیس ،عرفان چوہدری ،محمد حسین ،سردار رحمت اللہ ڈوگر،اور دیگر شامل ہیں نے اپنے اپنے بیانات میں بلدیاتی انتخابات کو ایک ڈھونگ قرار دیا ہے اور کہا ہے انتظامیہ نے مسلم لیگ ،،ن،،کے اشاروں پر قانون کی پاسداری کی بجائے حکمران لیگ کی من پسند آبادیوں کو چن چُن کر ادھر اُدھر کر دیا ،ایک دوسرے سے متصل آبادیوں کے حصے بخرے کر دیے ،فرضی اور خلائی آبادیوں کو شامل کرکے دھاندلی کی انتہا کردی ۔ پنجاب حکومت نے بلدیاتی قوانیں میں ترمیم کرکے جو وارڈ بنائے ہیں انہیں عوام سے بالکل خفیہ رکھا گیا ہے۔انتظامیہ کے افسران اور ملازمین کٹھ پتلی بن کر مسلم لیگ،، ن،، کے اسمبلی ممبران کے ہاتھوں میں نا چ رہے ہیں اور خوشامدی انتظامیہ اپنے آقاؤں کو خوش کرنے کیلیے انہیں بلدیاتی الیکشنوں میں دھاندلی سے کامیاب کرانے کیلیے اپنی سارے سرکاری وسائل اوراختیارات استعمال کرنے میں مصروف ہے۔ان رہنماؤں نے چیف جسٹس آ ف پاکستان ،اور الیکشن کمیشن پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ پنجاب میں دھاندلی کے ریکارڈ توڑنے والی کرپٹ انتظامیہ کا از خود نوٹس لیں ،اور انتخابات کو ساف اور شفاف بنانے کیلیے اسے عدلیہ کی زیر نگرانی دوسرے صوبوں کی طرح جماعتی بنیادوں پر کرائیں وگرنہ پنجاب حکومت کے کرپٹ افسران کے کرائے گئے دھاندلی زدہ انتخابات کو عوام کبھی بھی قبول نہیں کریں گے

یہ بھی پڑھیں  خیبر پختونخوا میں آج سرکاری سطح پر عید الفطر منائی جارہی ہے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker