تازہ ترینعلاقائی

پاکستان کوانسانی حقوق کی مقتل گاہ بنادیا گیاہے۔ ناصراقبال خان

لاہور (پریس ریلیز)ہیومن رائٹس موومنٹ کے مرکزی صدر محمدناصراقبال خان ،سیکرٹری جنرل محمدرضاایڈووکیٹ،نائب صدورمیاں ذوالفقارراٹھور،مہرمحمدسلیم،نائب صدورپنجاب شیخ طلال امجد،احدحنیف،عزت رسول ایڈووکیٹ،صدرکراچی یونس میمن،صدرفیصل آبادچودھری ندیم مصطفی،صدرچنیوٹ راناشہزاداقبال،صدرمنڈی بہاؤالدین مرزاخالد محمود، نائب صدورلاہورمرزا عنایت علی اورمہران اجمل خان نے کہا ہے کہ اقتدارکے ایوانوں میں ایسا کوئی نہیں جوعوام کی فریاد سنے ۔اسلامی جمہوریہ پاکستان کوانسانی حقوق کی مقتل گاہ بنادیا گیا ہے ۔عوام کی اس حالت زارمیں سیاستدانوں اورحکمرانوں سے زیادہ ان کااپنا ہاتھ ہے۔خدارا عوام اس باراپنے ووٹ کاحق استعمال کرتے وقت اپنے ضمیر کی آوازضرورکان دھریں۔سرمایہ دارسیاستدان ،سرداراوروڈیرے مفلس عوام کے ساتھ مخلص نہیں ہوسکتے ۔شخصیت پرستی ،پارٹی بازی اوربرادری ازم نے پاکستان کے مفادات اوراس کی سا لمیت پرکاری ضرب لگائی ۔وہ ایک اجلاس سے خطاب کررہے تھے۔محمدناصراقبال خان نے مزید کہا کہ عوام شعبدہ بازسرمایہ داروں کواپنا مسیحااورنجات دہندہ سمجھنا چھوڑدیں۔عوام یاد رکھیں چہروں کی تبدیلی کے بغیرسیاستدانوں کا مائنڈ سیٹ اورپاکستان کا ریاستی نظام نہیں بدلے گا۔انہوں نے کہا کہ پارلیمانی جمہوریت نے پاکستان کاوجود کرپشن سے داغداراورقومی معیشت کوبیمارکردیا ،پارلیمانی طرز حکومت نے ہمارے ملک میں موروثی سیاست کوفروغ دیا لہٰذا پاکستان میں صدارتی طرز حکومت کاتجربہ ناگزیر ہوگیا ہے۔صدارتی طرز حکومت نظام خلافت سے کافی ملتا جلتا ہے ،ایک بات طے ہے صدارتی طرز حکومت کے تحت کوئی حکمران اپنی ناکامی کابوجھ دوسروں کے کندھوں پرنہیں ڈال سکتا۔انہوں نے کہا کہ عوام کوپارلیمانی طرزحکومت پراعتماد نہیں رہا ،پاکستان اورپاکستانیوں نے جس تبدیلی کاخواب دیکھا ہے وہ صدارتی طرز حکومت کے بغیر شرمندہ تعبیر نہیں ہوسکتا۔

یہ بھی پڑھیں  شہر ڈسکہ اور گردو نواح میں مضر صحت ناشتہ کر نے سے شہری پیٹ کی مہلک بیماریوں کا شکار

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker