پاکستانتازہ ترین

طالبان سے 4 خفیہ ملاقاتیں ہوئی تھیں، سابق وزیر داخلہ رحمان ملک کا انکشاف

اسلام آباد (بیوروچیف)سابق وفاقی وزیر داخلہ رحمان ملک نے انکشاف کیا ہے کہ ان کی طالبان سے 4 خفیہ ملاقاتیں ہوئی تھیں، رحمان ملک کہتے ہیں مذاکراتی کمیٹی میں طالبان کو اپنا نمائندہ ڈالنا اور حکومت کو طالبان کا نام کالعدم تنظیموں کی لسٹ سے نکالنا چاہئے۔ سابق وزیر داخلہ نے پارلیمینٹ ہاؤس کے باہر میڈیا سے گفتگو میں انکشاف کیا کہ ان کی طالبان سے 4 خفیہ ملاقاتیں ہوئی تھیں، انہوں نے کہا کہ طالبان کی نامزد کمیٹی میں ملک کی سیاسی اور مذہبی جماعتیں شامل ہیں، طالبان کا اپنا کوئی ممبر نامزد نہیں، انہیں اپنا نمائندہ بھی ڈالنا چاہئے تھا۔رحمان ملک نے کہا کہ حکومت کو طالبان سے بات کیلئے پہلے ان کا نام کالعدم تنظیموں کی لسٹ سے نکالنا چاہئے، ورنہ کوئی عدالت میں جاکر مذاکراتی عمل کو چیلنج کرسکتا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ طالبان نے مذاکراتی کمیٹی کا اعلان کر کے ملک کو 2 حصوں میں بانٹ دیا ہے، حکومت طالبان سے پہلے سیز فائر کرنے کا مطالبہ کرے۔رحمان ملک نے کہا کہ الزام ثابت ہونے سے پہلے الطاف حسین کا میڈیا ٹرائل نہیں ہونا چاہئے، الطاف حسین ایک قومی لیڈر ہیں، ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ جب تک جان ہے تب تک میں وہ بولتا رہوں گا۔

یہ بھی پڑھیں  وزیر اعظم نواز شریف آج سے پھر اپنی ذمہ داریاں سنبھالیں گے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker