تازہ ترینعلاقائی

اوکاڑہ:موجودہ حکمران الیکشن سے قبل مزارعین سے کیے جانے والے وعدوں کی تکمیل کریں،مہرعبدالستار

اوکاڑہ(محمدمظہررشید بیوروچیف )انجمن مزارعین پنجاب کے جنرل سیکرٹری مہر عبدالستار نے کہا ہے کہ موجودہ حکمران حالیہ الیکشن سے قبل مزارعین سے کیے جانے والے وعدوں کی تکمیل کریں ان کو بلا جواز بے دخل کرنے کی سازشوں کے بجائے ان کو مالکانہ حقوق دینے کے لیے اپنا کلیدی رول پلے کریں تاکہ ان کا نام تاریخ میں امر ہو سکے موجودہ حکمران تعمیرو ترقی کے نام پر پنجاب کے مختلف اضلاع میں مزارعین کی زیر کاشت زمین پر منصوبہ جات کی آڑ میں ایک گھناؤنی سازش میں مصروف عمل ہیں لیکن کسی بھی صورت کسی کو بھی اپنی زمینوں پر شب خون مارنے کی ہرگز اجازت نہیں دیں گے ہماری خاموشی کو ہماری کمزوری نہ سمجھا جائے اگر ایک انچ جگہ بھی زبردستی حاصل کرنے کی کوشش کی گئی تو صوبہ بھر کے دس لاکھ سے زائد مزارعین پورے پنجاب کو جام کر کے رکھ دیں گے ان خیالات کا اظہار انہوں نے 4فور ایل کے علاقہ میں پر ہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا پریس کانفرنس سے چیر مین انجمن مزارعین لیاقت چوہدری،نور نبی ایڈووکیٹ اور یوسف خٹک نے بھی خطاب کیا مہر عبدالستار نے کہا گذشتہ ایک صدی قبل سے پنجاب بھر کے مختلف اضلاع میں لاکھوں مزارعین آرمی کے رقبہ کو کاشت کر رہے ہیں ۔گذشتہ چودہ سالوں سے لاکھوں انجمن مزارعین اپنے حقوق کی آواز کو بلند کرتے ہوئے اپنے مطالبات اقتدار میں آنے والے حکمرانوں کے سامنے رکھ رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ انجمن مزارعین خیر سگالی کا پیغام اعلیٰ ایوانوں تک پہنچاتی رہی ہے ہر دور حکومت میں ہمیں مالکانہ حقوق دئیے جانے کی یقین دہانی کروا دی جاتی ہے لیکن ہمیں مالکانہ حقوق دئیے جانے کے بجائے محض’’ لارے لپوں‘‘سے ڈنگ ٹپانے کی پالیسی پر عمل کیا جاتا ہے ۔مہرعبدالستار نے کہا کہ مزارعین کے حقوق سے کسی بھی صوت غافل نہ ہیں ہماری صفوں میں مکمل اتحاد ہے دس لاکھ سے زائد مزارعین ہر ایک آواز پر لبیک کرتے ہوئے سڑکوں پر نکل آئیں گے جس کے بعد پورا پنجاب بھی جام کر سکتے ہیں لیکن ہم پرا من لوگ ہیں قانون کو اپنے ہاتھ میں نہیں لینا چاہتے لیکن اگر کسی نے رات کی تاریکی میں شب خون مارنے کی کوشش کی اور ہماری زمینوں پر قبضہ جما کر ہمیں بے دخل کرنے کی سازش کی تو پورے صوبہ میں دمادم مست قلندر کر دیں گے ۔انہوں نے کہا موجودہ وزیر اعظم میاں نواز شریف نے الیکشن سے قبل اپنے دورہ اوکاڑہ کے دوران یہ وعدہ کیا تھا کہ اقتدار میں آتے ہی مزارعین کو مالکانہ حقوق کا اعلان کریں گے لیکن سات ماہ میں اب تک کوئی اعلان نہیں کیا گیا بلکہ ملتان اور خانیوال کے علاقہ میں کوئلہ پلانٹ اور یونیورسٹی بنانے کی آڑ میں ہمیں بے دخل کرنے کی سازش بنائی جا رہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ ہمیں اس بات سے کوئی اختلاف نہیں ہے کہ ملک میں ترقیاتی کام کیوں ہو رہے ہیں بلکہ ہم چاہتے ہیں کہ ان منصوبہ جات کے لیے مزارعین کی زمینوں کے بجائے ایسی زمینوں کا انتخاب کیا جائے جو کے سرکاری ہیں اور ان پر با اثر لوگ قبضہ جمائے ہوئے ہیں ۔مہر عبدالستار نے کہا کے اپنے اگلے لائحہ عمل کا اعلان جلد کیا جائے گا اس موقع پر خانیوال،ساہیوال ،میاں چنوں ،لودھراں،اوکاڑہ،رینالہ،سمیت صوبہ بھر سے آئے مزارعین رہنماؤں سمیت ہزاروں مزارعین بھی موجود تھے *

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button