تازہ ترینعلاقائی

چنیوٹ:وردی اوراختیارات کا ناجائز فائدہ اٹھا کر صحافیوں اورشریف شہریوں سے پولیس گردی

چنیوٹ(ڈسٹرکٹ رپورٹر)وردی اور اختیارات کا ناجائز فائدہ اٹھا کر صحافیوں اور شریف شہریوں کو پولیس گردی کا نشانہ بنانے اور غیر قانونی سرگرمیوں کے باعث مذہبی انتشار کا سبب بننے والے چناب نگر چوکی کے انچارج ASIگلزار ھرل کی غیر قانونی سرگرمیوں کا نوٹس لیتے ہوئے RPO فیصل آباد محمد نواز محمد نواز وڑائچ نے ASI کو معطل کرکے لائن حاضر کردیا، معطلی کی خبر سنتے ہی چناب نگر کی قادیانی لابی کی اُمیدوں پر قیامت ٹوٹ گئی اور قادیانی دفتر میں تعینات شبیر باجوہ نے ASI گلزار ھرل کی بحالی کے لئے دن رات ایک کرتے ہوئے سرد ھڑکی بازی لگا کر آخر کار معطلی کے آرڈر منسوخ کروالئے، شبیر باجوہ قادیانی ایجنٹ ہے اور قادیانیوں نے محلہ دار النصر میں ایک گھر تعمیر کرنے کی آڑ میں عبادت گاہ بنانا شروع کر رکھی ہے کیونکہ قادیانیوں کی عبادت گاہ پر قانوناً پابندی ہے اس قانون شکنی پر عملدر آمد کروانے کے لئے شبیر باجوہ نے چوکی انچارج گلزار ھرل کی ہمدردیاں حاصل کررکھی ہیں اور گلزار ھرل عبادت گاہ کی تعمیر میں نہ صرف بھر پور کردار ادا کررہا ہے بلکہ قانون شکن عناصر کو مکمل شیلٹر فراہم کررہا ہے دوسری طرف مسلمان طبقہ میں گلزار ہرل نے یہ ڈرامہ رچا رکھا ہے کہ یہ عبادت گاہ نہیں بلکہ گھر کی تعمیر ہورہی ہے سوال یہ اٹھتا ہے کہ اگر گھر کی تعمیر ہورہی ہے تو پھر وہاں پولیس شیلٹر کا کیا جواز ہے؟ گلزار ھرل کی معطلی کے دوران عبادت گاہ کی تعمیر کا کام رکوادیا تھا اور تعمیری سامان بلدیہ چناب نگر کی تحویل میں دے دیا گیا تھا۔ اب قادیانی ایجنٹ شبیر باجوہ نے اپنے مذحوم مقاصد کی تکمیل کی خاطر گلزار ھرل کی معطلی کے آرڈر منسوخ کرواکے ASI گلزار کو دوبارہ اس متنازعہ اور غیر قانونی عمارت کی تکمیل کا ٹارگٹ دے دیا ہے جس سے مذہبی حلقوں میں تشویش کی نئی لہر پیدا ہوگئی ہے مذہبی حلقوں کا کہنا ہے کہ ASIگلزار ھرل کی چناب نگر میں تعیناتی کسی بھی وقت ایسے ناخوشگوار واقعہ کا سبب بن سکتی ہے جو ناصرف مذہبی انتشار کا پیش ضیمہ ثابت ہوگا بلکہ خونریز تصادم کا باعث بھی بن سکتی ہے کیونکہ چناب نگر مذہبی لحاظ سے انتہائی حساس ہے اور چوکی چناب نگر میں کسی انتہائی سنجیدہ اور معاملہ فہم تھانیدار کی تعیناتی وقت کی اہم ضرورت ہے گلزار ھرل ASIچوکی انچارج جس پر خود کرائم کے کئی ایک مقدمات درج ہیں ایسے معاملات کو سنبھالنا اُسکے بس کی بات نہیں ہے اور قادیانی لابی ذاتی مفاد کی تکمیل سے ایسا مذہبی فتنہ اُٹھ سکتا ہے جس سے غیر معمولی جانی ومالی نقصان کا اندیشہ ہے وزیر اعلیٰ پنجاب، آئی جی پنجاب اور RPOفیصل آباد اس طرف توجہ فرماکر فوری طور پر راست اقدام کے احکامات صادر فرمائیں تاکہ شہر کا امن برقرار رہ سکے بعد ازاں ایم پی ائے چنیوٹ مولانا الیاس چنیوٹی نے اے ایس آئی کی ڈرامائی معطلی و لائن حاضری پر شدید احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ ایسے ملازمین کو فارغ کیا جائے جو مذہبی فسادات کو جنم دینے کی وجہ بن رہے ہیں انہوں نے آر پی او فیصل آباد سے مطالبہ کیا کہ مذکورہ چوکی انچارج چناب نگر کو وہاں سے فوری تبدیل کیا جائے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker