تازہ ترینعلاقائی

سنجھورو:پولیس نے عوام کو ڈاکوؤں کے رحم وکرم پرچھوڑدیا

سنجھورو(نامہ نگار)سنجھورو تھانے کی حدود میں گزشتہ دو ماہ سے خطرناک حد تک اضافہ ہو گیا ہے اور ہر روز موٹر سائیکلیں چھننے اور ڈکیتی کی وارداتیں رو نما ہونے لگی ہیں۔اس سلسلے میں گزشتہ رات 8نامعلوم مسلح افراد نے محمد افراہیم کھرل کے گھر پر دھاوا بول دیا اور اسلحہ کے زور پر اہلِ خانہ کو یرغمال بنا کر 4 گھنٹے تک لوٹ مار کرتے رہے اور جاتے ہوئے اہلِ خانہ کو کمرے میں بند کر کے 10تولہ سونے کے زیورات،50ہزار روپے نقد،ایک رپیٹر اور دیگر قیمتی سامان لوٹ کر فرار ہوگئے۔جبکہ اسی رات بٹور شاخ کے رہائشی،دیھ 38جمڑاؤ کے دیہاتی اور شہر میں بھی متعدد افراد سے موٹر سائیکل چھین لی گئی۔جبکہ ایک ہفتے قبل بھی ڈکیتی اور چوری کی وارداتوں میں لاکھوں روپئے لوٹ لئے گئے۔سنجھورو پولیس نے عوام کو ڈاکوؤں کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا ہے اور مسلح گروہ کا سراغ لگانے میں ناکام ہو چکی ہے دوسری جانب متاثرین نے الزام عائد کیا ہے کہ مقامی پولیس مسلح گرہ کی سرپرستی کر رہی ہے اور جس علاقے میں جرم ہو تاہے پولیس اس علاقے سے غائب کر دی جاتی ہے اور لوٹے ہوئے مال میں اپنا حصہ وصول کرتی ہے۔ جبکہ اگر کوئی شخص موٹر سائیکل چھننے کی واردات کی فریا داخل کراتا ہے تو اسے فریاد داخل کرنے کے بجائے جرائم پیشہ افراد سے رابطہ کرنے کا مشورہ دیا جاتا ہے تاکہ پولیس کو اپنا مختص حصہ مل سکے۔شہریوں نے بڑھتی ہوئی جرائم کی وارداتوں پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے SSPسانگھڑ سے اپیل کی ہے کہ سنجھورو تھانے کی حدود میں ایماندار افسران تعینات کئے جائیں تاکہ جرائم میں کمی لائی جاسکے اور عوام کو تحفظ فراہم کیا جاسکے۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
error: Content is Protected!!