تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیرو:وزیر اعلیٰ بنچاب کا پڑھا لکھا خواب خطرے میں

بھائی پھیرو(نامہ نگار) وزیر اعلیٰ بنچاب کا پڑھا لکھا خواب خطرے میں ویزراعلیٰ پنجاب کا پڑھا لکھا پنجاب اور مفت تعلیم کو مذاق، انچارج وئیر ہاوس پتوکی نے سا ت ہزار سرکاری کتابیں غائب کر کے بچیوں کا مستقبل داو پر لگا دیا۔ سرائے مغل اورتحصیل پتوکی کے دوسو گرلز سکولوں کو کتابیں نہ مل سکی، حصول تعلیم میں دشواری ۔ تفصیلات کے مطابق وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے پنجاب بھر کے سرکاری سکولوں میں مفت کتابیں دینے کا اعلان کر رکھا ہے، جس کے مطابق تحصیل پتوکی کے ہر سکول ،ھلہ ،سرائے مغل، شیخم، ہنجرائے کلاں، کھڈیاں چک 41 ، تارا گڑھ کے علاوہ تقریباً دوسوسکولوں میں سرکاری کتابیں مفت فراہم کی جانی تھی لیکن تحصیل پتوکی وئیر ہاوس کے انچارج عزیز الرحمان نے کتابوں کے سٹاک سے سات ہزار کتابیں غائب کر دی ہیں اور اس کے علاوہ ایک امتیازی سلوک یہ کیا کہ بقیہ کتابیں گورنمنٹ بوائیز سکولوں میں اپنے دوست اساتذہ کو دے کر نواز دیا لیکن گرلز سکولوں کے سات ہزار طالبات کو تحصیل بھر میں ایک قاعدہ بھی نہ مل سکا، گرلز الیمنٹری سکولز کی طرف سے بار بار ڈیمانڈ کی گئی لیکن انچارج وئیر ہاوس عزیز الرحمان نے انھیں بار بارٹرخا دیااور ایک قاعدہ بھی نہ دیا ، جس سے طالبات کو مفت سرکاری کتابیں نہ ملنے پر پڑھائی کا نقصان ہونے کے علاوہ معاشی نقصان بھی ہے۔ انچارج وئیر ہاوس عزیز الرحمان سے جب اس کرپشن اور امتیازی سلوک کے متعلق پو چھا گیا تو اُس نے کہا مجھے EDO صاحب قصور کا حکم ہے کہ کتا بیں صرف بوائیز سکولوں میں تقسیم کی جائیں۔EDO قصور کے نمبر0300-7726556 پر جب موقف جاننے کے لیے رابطہ کیا تو انھوں نے کال وصول نہ کی۔ یاد رہے کہ انچارج وئیر ہاوس عزیزالرحمان کو ماضی میں محتلف سکولوں سے کرپشن کی بنا پر ایک سابق ڈائیریکٹر ایجوکیشن نے اس پر پابندی عائد کی کے اس کرپٹ استادکو شہر پتوکی کے پچیس کلومیٹر گر و نواح میں تعینات نہ کیا جائے۔لیکن با اثر عزیز الرحمان اس کے باوجود شہر پتوکی میں ہی بڑے دھڑلے سے ہیڈ ماسٹر اور انچارج وئیر ہاوس بنا بیٹھا ہے، کیا وزیر اعلیٰ پنجاب تعلیمی ساکھ بچانے کے لیے کرپٹ ہیڈ ماسٹر کے خلاف کاروائی کرکے بچیوں کے مستقبل کو تباہی سے بچائیں گے؟ متاثرہ بچیوں کے والدین نے پریس کلب سرائے مغل اور پریس کلب پتوکی کے سامنے شدید احتجاج کرتے ہوئے ویزاعلیٰ پنجاب سے مطالبہ کیا کے اگر ہماری بچیوں کو تین د ن میں کتابیں فراہم نہ کی گئی تو ہم پنجاب اسمبلی کے سامنے دھرنا دینے پر مجبور ہونگے۔

یہ بھی پڑھیں 

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker