تازہ ترینفن فنکار

کامیڈین منور ظریف کی آج 38ویں برسی منائی جا رہی ہے

کراچی(نمائندہ شوبز) شہنشاہ ظرافت کا خطاب پانے والے نامور کامیڈین منور ظریف کی آج 38ویں برسی منائی جا رہی ہے۔بے ساختہ اداکاری سے شائقین کے چہروں پر مسکراہٹ بکھیردینے والے منور ظریف 2 فروری1940 کو گوجرانوالہ میں پیداہوئے جنہیں مزاح کا فن وراثت میں ملا ۔ انہوں نے اپنے کیرئیر کا آغاز1961میں ریلیز ہونیوالی فلم ڈنڈیاں سے کیا جس کے بعد ان کی مقبولیت میں دن بدن اضافہ ہوتا چلا گیا۔ 1973ء میں وہ پہلی بار اردو فلم ’پردے میں رہنے دو‘ میں سائیڈ ہیرو کے روپ میں سامنے آئے اور اسی سال ایک اور فلم ’رنگیلا اور منور ظریف‘ کی کامیابی نے منورظریف کو سپر اسٹار بنا دیا۔ ان کے کیریئر کی لازوال فلم ’بنارسی ٹھگ‘ رہی، جس میں منور ظریف نے مختلف گیٹ اپ کئے اور اپنے ورسٹائل اداکار ہونے کی مہر ثبت کردی  منور ظریف 29اپریل 1976ء کو دل کا دورہ پڑنے کے باعث اس دنیا فانی سے رخصت ہو گئے، مگر ان کے ادا کئے ہوئے کردار انہیں آج بھی انہیں مداحوں کے دلوں میں زندہ رکھے ہوئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں  اوکاڑہ : بیرون ملک رہنے والے پاکستانی وطن عزیز کے لئے گراں قدر خدمات سر انجام دے رہے ہیں ۔ میاں محمد منیر

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker