پاکستانتازہ ترین

شمالی وزیرستان میں فضائی کارروائی،32ےزائددہشتگردہلاک

شمالی وزیرستان(نمائندہ خصوصی) شمالی وزیرستان ایجنسی کے مختلف علاقوں میں پاک فوج کی فضائی کارروائی میں 100 سے زائد دہشت گردوں کو ہلاک کردیا گیا، جب کہ عسکری حکام نے بتیس دہشت گردوں کی ہلاکت کی تصدیق کردی۔ مارے جانے والوں میں اہم کالعدم طالبان کے دہشت گرد جنگجو بھی شامل ہیں۔ عسکری ذرائع کے مطابق شمالی وزیرستان کی تحصیل میر علی اور بویا میں جیٹ طیاروں کی بمباری سے غیرملکیوں سمیت 100سے زائد دہشت گردوں کو ہلاک کردیا گیا۔ سرکاری ذرائع کے مطابق بمباری میں کالعدم تحریک طالبان کے اہم جنگجو بھی نشانہ بنے۔ مرنے والوں میں ٹی ٹی پی کمانڈر موسیٰ ،صابر، دختر محمد اور جہاد یار شامل ہیں۔ دوسری جانب پولیٹیکل انتظامیہ کی جانب سے میر علی بازار کو صبح 10 بجے تک خالی کرنے کا حکم دے دیا گیا ہے، میران شاہ اور میر علی میں گن شپ ہیلی کاپٹروں سے شیلنگ بھی کی گئی۔ میران شاہ کے قریب بھی دہشت گردوں کے ٹھکانوں کو گن شپ ہیلی کاپٹروں کے ذریعے نشانہ بنایا گیا، جب کہ شمالی وزیرستان ایجنسی میں غیر معینہ مدت کے لئے کرفیو نافذ کردیا گیا ہے، خلاف وزری کرنے والوں کو دیکھتے ہی گولی مارنے کا حکم ہے۔  سیکیورٹی ذرائع کے مطابق شمالی وزیرستان میں شدت پسندوں کے خلاف کارروائی رات تقریباً 2 بجے کے بعد کی گئی۔  میر علی میں حسو خیل، ایسوڑی، حرمز اور موسکی جب کہ تحصیل بویا کے علاقوں دیگان اور لانڈ محمد خیل میں شدت پسندوں کے ٹھکانوں پر جیٹ طیاروں سے بمباری کی گئی، کارروائی میں غیر ملکیوں سمیت درجنوں دہشت گرد مارے گئے اور کئی ٹھکانے تباہ ہوئے۔ کارروائی میں ہلاک ہونے والے دہشت گرد پشاوردھماکے، باجوڑ اورمہند ایجنسی میں عام شہریوں کے قتل اورفورسزپرحملوں میں ملوث تھے  صبح سویرے میران شاہ اور میر علی کے مختلف علاقوں پر گن شپ ہیلی کاپٹروں سے شیلنگ بھی کی گئی تاہم اس میں اب تک کسی ہلاکت کی اطلاع نہیں ملی

یہ بھی پڑھیں  رینالہ خورد:پولیس اورڈسٹرکٹ لائیوسٹاک آفیسر کا مشترکہ چھاپہ ،40من مردہ گوشت برآمد

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker