پاکستانتازہ ترین

نیابجٹ،سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں10سے15فیصداضافےکاامکان

اسلام آباد (بیوروچیف)آئندہ بجٹ تقریبا فائنل ہے مگر سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پینشن میں اضافے کا دارومدار وزیراعظم کے موڈ پر ہے، تاہم یہ طے ہے کہ تنخواہ دار طبقے کے لئے موجودہ انکم ٹیکس سلیبز میں کمی بیشی نہیں ہوگی۔ سرکاری ملازمین کی تنخواہیں اور پنشن کتنی بڑھے گی کچھ یقینی طور پر کہا نہیں جاسکتا، ڈار صاحب نے دو تجاویز تیار کروائی ہیں، ایک میں تنخواہ اور پینشن 10 فیصد دوسری میں 15 فیصد بڑھانے کا آپشن دیا ہے۔ وزارت خزانہ کے بجٹ سازوں نے تجویز کیا ہے کہ مہنگائی کے تناسب سے، تنخواہ پنشن میں 10 فیصد اضافہ بہت ہے، وزیراعظم سرکاری ملازمین اور پنشنرز پر حد سے زیادہ مہربانی کرنا چاہیں تو 15 فیصد بڑھا دیں۔  ذرائع کے مطابق موجودہ مالی سال کی انکم ٹیکس سلیب ،آئندہ بجٹ میں برقرار رہے گی ، اور انکم ٹیکس چھوٹ کی حد کو ، 4 لاکھ روپے سالانہ ہی رکھا جائے گا ۔ اس کا حکومت کو فائدہ ہی فائدہ ہو گا۔ ایک تو تنخواہ بڑھنے کے بعد کم تنخواہ والے مزید ملازمین پرانکم ٹیکس واجب ہو جائے گا، جو تنخواہ دار اس وقت انکم ٹیکس سلیب کی آخری حد کے قریب ہیں وہ اگلی سلیب میں پہنچ جائیں گے، ممکن ہے کچھ ملازمین کو لینے کے دینے پڑ جائیں

یہ بھی پڑھیں  ذوالحجہ کا چاند دیکھنے کیلئے رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس کل کراچی میں ہوگا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker