تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیرو:وکلا،سیاستدانوں اورجماعت اسلامی کی جانب سے ایم پی اے راناجمیل عرف گڈ خاں کے اغواکی شدید مذمت

بھائی پھیرو(نامہ نگار) وکلا،سیاستدانوں اورجماعت اسلامی کی جانب سے ایم پی اے راناجمیل عرف گڈ خاں کے اغوا کی شدید مذمت۔ضلع قصورسمیت پوراصوبہ لاقانونیت کی بھینٹ چڑھ چکا ہے۔حکومت اور دیگرقانون نافذ کرنے والے ادارے قانون کی رٹ قائم کریں۔ان خیالات کا اظہار امیر جماعت اسلامی ضلع قصور عثمان غنی ،وکلا عبدالزاق چوہدری ،سردار علی احمد ڈوگر،سردار امجد ڈوگر،رائے محمد افضل کھرل اور دیگر کئی سیاسی سماجی رہنماؤں نے ایم پی اے راناجمیل کے اغوا کی شدیدالفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ یہ واقع قانون نافذ کرنے والوں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان قراردیاہے۔ان رہنماؤں نے کہاکہ جس ملک میں ایم پی اے محفوظ نہیں وہاں غریب عوام کے ساتھ کیساسلوک ہوتاہوگااس کااندازہ لگانامشکل نہیں۔ضلع قصورسمیت پوراصوبہ لاقانونیت کی بھینٹ چڑھ چکا ہے۔چور ڈاکو دن دیہاڑے دندناتے پھرتے ہیں پولیس اور قانون نافذ کرنے والے ادارے خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں۔اگرعلاقے کاایس ایچ او افسر اپناکام پوری ایمانداری سے کرے تو جرائم کی شرح مکمل طور پر ختم ہوسکتی ہے۔انہوں نے کہاکہ شہبازشریف نے اپنے سابقہ دور حکومت میں تھانہ کلچر میں تبدیلی کے حوالے سے پولیس کوتمام وسائل مہیاکیے۔تنخواہوں کے علاوہ دیگرمراعات میں بھی قابل ذکر اضافہ کیامگرمحکمے کی کارکردگی میں کوئی نمایاں فرق نظر نہیں آیا۔آج بھی صوبے میں جس کی لاٹھی اس کی بھینس کاقانون رائج ہے۔ضرورت اس امر کی ہے کہ تھانہ کلچر کے نظام میں بنیادی تبدیلیاں لائی جائیں۔اداروں اور بالخصوص قانون نافذ کرنے والے اداروں میں سے کرپٹ عناصر اور افسر شاہی کاخاتمہ کیاجاناچاہئے۔بدقسمتی اس سے بڑھ کر اور کیا ہوگی کہ عوام کواپنے جائز کام کروانے کے لئے بھی رشوت دینی پڑتی ہے۔عوام کے جان ومال تک محفوظ نہیں ہیں۔ان رہنماؤں نے مزیدکہاکہ میڈیا کی رپورٹ کے مطابق وزیر اعلیٰ کی تمام ترکوششوں کے باوجود جرائم کی شرح میں مسلسل اضافہ ہورہاہے جوکہ انتہائی خطرناک اور باعث تشویش ہے۔پوراصوبہ جرائم کی آماجگاہ بن چکاہے۔جماعت اسلامی کے رہنمانے مطالبہ کی کہ حکومت اور دیگر سیکیورٹی ادارے قانون کی رٹ قائم کریں۔حکومت اپنی ہی جماعت کے ایم پی اے راناجمیل کو جلد ازجلد بازیاب کروائے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button