تازہ ترینعلاقائی

آل کشمیر نیوز پیپرز سوسائٹی کی ایگزیکٹیو کونسل کا اجلاس

unnamed (2)راولپنڈی( پ ر)آل کشمیر نیوز پیپرز سوسائٹی(AKNS)کی ایگزیکٹیو کونسل کا اجلاس قائمقام صدر شیر باز منیر کی صدارت میں منعقد ہوا جس میں جنرل سیکرٹری خواجہ سرفراز ،سیکرٹری اطلاعات سجاد حسین شاہ،سیکرٹری مالیات اطہر مسعود وانی،نائب صدر ذالفقار بٹ ،ڈپٹی سیکرٹری جنرل زاہد بیگ، ایگزیکٹیو ممبران صوفی اللہ دتہ خاکستار اورسردار امتیار نے شرکت کی۔واضح رہے کہ ’’ اے کے این ایس‘‘ کے صدر عامر محبوب نے گزشتہ دنوں ذاتی مصروفیات کی وجہ سے اپنے عہدے سے استعفی دے دیا تھا۔اجلاس میں سابق صدر عامر محبورب کی ’’ اے کے این ایس‘‘ اور ریاستی صحافت کے لئے گرانقدر خدمات پر انہیں خراج تحسین پیش کیا گیا۔ہفت روزہ ’’ کشیر‘‘ کے دفتر میں منعقد ہونے والے ایگزیکٹیو کونسل کے اجلاس میں، گزشتہ اجلاس میں پانچ اخبارات کو سوسائٹی کی رکنیت دینے کے فیصلے کی توثیق کی گئی اور رکنیت کی سکرونٹی کے لئے درخواست دینے کے آخری تاریخ میں اضافہ کرتے ہوئے 20جنوری 2015ء مقرر کی گئی جس میں قطعی اضافہ نہیں کیا جائے گا،جس کے بعد چیئر مین سکرونٹی کمیٹی سردار امتیاز تمام ممبران کی فیس،ریکارڈمکمل ہونے کی کا جائزہ لیں گے ، ایگزیکٹیو کونسل کے اجلاس میں اس کی منظوری دی جائے گی اور اس کے بعد جنرل کونسل کا اجلاس طلب کیا جائے گا۔اجلاس میں قائمقام صدر نے اپنے اختیارات کو بروئے کار لاتے ہوئے دو ایگزیکٹیو ممبران خالد چودھری( میر پور) اور شہزار لولابی(مظفر آباد) کا تقرر کیا۔’’ AKNS‘‘کی ایگزیکٹیو کونسل کے اجلاس میں اس بات پہ تشویش کا اظہار کیا گیا کہ آزاد کشمیر حکومت کی کابینہ نے ’’ہتک عزت ‘‘ کے مسودہ قانون کی منظوری دی ہے جس کے مطابق ہتک عزت کے مقدمات فوری فیصلوں کی غرض سے فوجداری عدالتوں میں چلائے جائیں گے۔میڈیا کے لئے ضابطہ اخلاق تیار کئے بغیر اخبارات میں شائع خبروں وغیرہ کی بنیاد پر فوجداری عدالتوں میں ہتک عزت کے مقدمات چلانے کی بات نامناسب ہے۔ہتک عزت کے موجودہ مسودہ قانون کی کابینہ سے منظوری کا مطلب یہی ہے کہ حکومت اخبارات کو فوجداری عدالتوں میں گھسیٹنے کی کوشش کر رہی ہے۔’’ ہتک عزت ‘‘ سے متعلق قانون بنانے سے پہلے اس بارے میں مشاورت اور میڈیا کے لئے ضابطہ اخلاق کا تیار کیا جانا ضروری ہے۔۔’AKNS‘‘ نے واضح کیا کہ حکومت کو تحریک آزادی کشمیر کے بیس کیمپ میں آزادی اظہار پر پابندی کے لئے اخبارات و جرائد کو نت نئے قوانین اور ضابطوں کا پابند نہیں بنانا چاہئے ۔اگر حکومت نے ریاستی اخبارات و جرائد کی آزادی پر پابندی پر مبنی قوانین اسمبلی سے منظور کئے تو ’’AKNS‘‘ کی طرف سے آزادی اظہار پر پابندی اور اخبارات کو فوجداری مقدمات میں ملوث کرنے کا معاملہ ہر ملکی اور غیر ملکی پلیٹ فارم پر بھی اٹھایا جا سکتا ہے۔’’AKNS‘‘ نے آزاد کشمیر حکومت سے مطالبہ کیا کہ صحافتی تنظیموں اور سینئر صحافیوں کی مشاورت سے میڈیا کے لئے ضابطہ اخلاق بنایا جائے اور اطلاعات تک رسائی کا قانون آزاد کشمیر میں اسمبلی سے منظور کیا جائے۔اجلاس میں روزنامہ’’ شمال ‘‘(مظفر آباد) کے ایڈیٹر نصیر انور کے خلاف پولیس تشدد کی سخت الفاظ میں مذمت کی گئی اور حکومت سے معاملے کا سخت نوٹس لینے کا مطالبہ کیا گیا۔ایگزیکٹیو کونسل کے اجلاس میں حکومت سے یہ مطالبہ بھی کیا گیا کہ وزیر اعظم آزاد کشمیر کی طرف سے ’’ AKNS‘‘ کے تحریری منظور شدہ مطالبات پر جلد عملدرآمد کیا جائے۔اجلاس میں معروف قلمکار اشفاق ہاشمی اور روزنامہ ’صبح نو‘ کے بانی ریاض خواجہ کی وفات پر فاتحہ خوانی کی گئی۔

یہ بھی پڑھیں  بس کردو

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker