پاکستانتازہ ترین

قومی ایکشن پلان پر اس کی روح کے مطابق عمل درآمد یقینی بنایا جائے،وزیراعظم

اسلام آباد(بیوروچیف)وزیراعظم نوازشریف نے کہا ہے کہ دہشت گردوں کوچھپنے کی پناہ نہیں ملے گی ،قومی ایکشن پلان پر عمل درآمد ہی دہشتگردی کے خلاف کامیابی کی کنجی ہے،تمام صوبے ہاتھوں میں ہاتھ ڈال کرکام کریں،مقصدکےحصول کیلئےخصوصی اضافی فنڈزبھی دیناپڑےتوفراہم کریں گے۔وزیراعظم نواز شریف کی زیر صدارت قومی ایکشن پلان پر عمل درآمد کاجائزہ لینےکیلئےاعلیٰ سطح کا اجلاس پرائم منسٹرہائوس میںہوا، اجلاس میں وفاقی وزراء، چاروں وزراء اعلیٰ،گورنر خیبرپختون خوا ،آرمی چیف، ڈی جی آئی ایس آئی اوردیگراعلیٰ عسکری و سول حکام شریک ہوئے۔ذرائع کے مطابق وزرائے اعلیٰ اور چیف سیکرٹریز نے نیشنل ایکشن پلان پرعمل درآمد کیلئے اپیکس کمیٹیز کے اجلاسوں اور دیگرااقدامات پربریفنگ دیں۔کئی گھنٹےجاری رہنےوالےاجلاس میں صوبائی سطح پردہشتگردوں کے خلاف سول اورفوجی حکام نےمشترکہ لائحہ عمل طے کیا،وزارت داخلہ کے ذریعے صوبوں سےدہشت گردی کےکیسز فوجی عدالتوں کوبھجوانے کےطریقہ کارکوبھی حتمی شکل دی گئی۔ عسکری حکام نے آپریشن ضرب عضب،پاک افغان سرحد اور خیبرایجنسی میں جاری دہشتگردوں کیخلاف کارروائیوں پربریفنگ دی۔ وزیراعظم نے افغان مہاجرین کی رجسٹریشن ہرصورت جلد از جلد مکمل کرنے کی ہدایت کی۔ وزیراعظم کاخطاب میں کہناتھاکہ قومی ایکشن پلان پر اس کی روح کے مطابق عمل درآمد یقینی بنایا جائے اور اس کے لیےتمام وسائل بروئے کار لائے جائیں، یہی دہشت گردی کے خلاف کامیابی کی کنجی ہے۔قومی لائحہ عمل کے تحت فوجی عدالتیں قائم کی جارہی ہیں ،قانون نافذ کرنے والے اداروں اور انٹیلی جنس ایجنسیز کی استعداد کار میں اضافہ ترجیح ہے،صوبے پولیس کے تقرر وتبادلے میں میرٹ اور شفافیت کو ہرصورت یقینی بنائیں ۔وزیراعظم نےکہاکہ قومی قیادت اور قوم دہشت گردی کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے کیلئےپرعزم ہے،صوبوں کو ہاتھ میں ہاتھ ڈال کر کام کرنا ہوگااور اپنے مقصد میں ہرصورت کامیاب ہونا ہے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
error: Content is Protected!!