پاکستانتازہ ترین

طاہر القادری نے چارٹر آف ڈیمانڈ پیش کردیا

لاہور (نمائندہ خصوصی) ڈاکٹر علامہ طاہر القادری نے نواز، شہباز سے استعفیی اور انہیں قتل کے الزام میں گرفتار کرنے کا مطالبہ کردیا۔ پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر علامہ طاہر القادری نے انقلاب مارچ سے خطاب کرتے ہوئے چارٹر آف ڈیمانڈ پیش کردیا۔ پہلا مطالبہ نواز شریف اور شہباز شریف فوری استعفیٰ دیں، وزیراعظم نواز شریف اور وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کو سانحہ ماڈل ٹاؤن میں شہید افراد کے قتل کے الزام میں گرفتار کیا جائے، ان کے ساتھ بھی وہی سلوک کیا جائے جو ایک عام شہری کے ساتھ ہوتا ہے۔  دوسرا مطالبہ  وفاقی اور پنجاب کابینہ کے ارکان بھی استعفیٰ دیں، وفاقی اور صوبائی حکومتیں فی الفور ختم کی جائیں، اسمبلیاں تحلیل کی جائیں۔ تیسرا مطالبہ  متفقہ طور پر ریفارمز ایجنڈا رکھنے والی قومی حکومت کی تشکیل کی جائے۔ چوتھا مطالبہ  قومی حکومت کے ذریعے کرپشن میں ملوث سیاستدانوں اور سرکاری افسران سمیت ہر شخص کا بے رحم احتساب کیا جائے۔ پانچواں مطالبہ  قومی حکومت کے ذریعے غریبوں کیلئے 10 نکاتی انقلابی ایجنڈا نافذ کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ لاہور کی مقامی عدالت نے نواز شریف اور شہباز شریف سمیت 21 افراد کیخلاف قتل کا مقدمہ درج کرنے کا حکم دیدیا، شہداء کے ساتھ یہی انصاف ہوگا کہ نواز اور شہباز مستعفی ہوں اور انہیں گرفتار کیا جائے، یہ مطالبات پورے ہونے تک ہم یہاں سے نہیں جائیں گے۔ طاہر القادری نے مزید کہا کہ ایف آئی اے، ایئرپورٹ اتھارٹی سے کہتا ہوں کہ نواز اور شہباز شریف سمیت ان 21 افراد کا نام ای سی ایل میں ڈالا جائے، انہیں ملک چھوڑ کر بھاگنے نہ دیا جائے۔پی اے ٹی ڈاکٹر علامہ طاہر القادری نے انقلاب مارچ کے شرکاء سے سانحہ ماڈل ٹاؤن میں جاں بحق افراد کے قاتلوں سے بدلہ لینے اور ان کے خون سے غداری نہ کرنے کا وعدہ لیا، ان کا کہنا ہے کہ شہداء پوچھتے ہیں کیا قاتل گرفتار ہوں گے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button