پاکستانتازہ ترین

جسٹس ناصر اسلم زاہد کے نام پر جماعت اسلامی بھی متفق ہوگئی

اسلام آباد(بیوروچیف)تحریک انصا ف کےبعد جماعت اسلامی نے بھی چیف الیکشن کمشنر کے لیے جسٹس ناصر اسلم زاہد کا نام تجویز کردیا ہے ، جبکہ ان دونوں جماعتوں کے ساتھ پیپلز پارٹی نے بھی موجودہ الیکشن کمیشن پرعدم اعتماد ظاہر کرتےہوئے کمیشن کے تمام ارکان سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کیا ہے۔ نئے چیف الیکشن کمیشن کی تعیناتی کے سلسلے میں اپوزیشن لیڈر سید خورشید شاہ آج تحریک انصاف کے شاہ محمود قریشی سے ملنے گئے، انہیں اپنے نام بتائے اور ان کے نام بھی سنے ، اس موقع پر خورشید شاہ کا کہنا تھاکہ جسٹس بھگوان داس اور ناصر اسلم زاہد سمیت کئی ایک نام زیر غور ہیں اورموجودہ الیکشن کمیشن پر انہیں بھی تحفظات ہیں ۔ اس موقع پرشاہ محمود قریشی کا کہنا تھاکہ موجودہ الیکشن کمیشن ناکام اور متنازع ہوچکا ہے ، اس الیکشن کمیشن کے تحت انہیں کوئی الیکشن قبول نہیں ، وہ غیر جانبدار ، آزاد اور خودمختار الیکشن کمیشن چاہتےہیں اور الیکشن کمشنر کے لیے وہ جسٹس رٹائرڈ ناصر اسلم کا نام تجویز کرتےہیں۔ دوسری طرف پشاور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے جماعت اسلامی کے سیکریٹری جنرل لیاقت بلوچ نےبھی اپنی جماعت کی طرف سے چیف الیکشن کمشنر کےلیے جسٹس ناصر اسلم زاہد کے نام کی حمایت کی ، ساتھ ہی موجودہ چیف الیکشن کمیشن کے مستعفی ہونے کا مطالبہ کیا۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button