تازہ ترینفن فنکار

گلوکار حبیب ولی محمد 90 برس کی عمر میں انتقال کرگئے

کراچی(نمائندہ شوبز)مدھر آواز اور دھیمے سروں کے گلوکار حبیب ولی محمد 90 برس کی عمر میں انتقال کرگئے، وہ گزشتہ کئی روز سے لاس اینجلس کے ایک اسپتال میں زیر علاج تھے۔حبیب ولی محمد 1921ء میں رنگون یعنی موجودہ میانمار میں پیدا ہوئے، بعد ازاں ان کا خاندان ممبئی منتقل ہوگیا، 1947ء میں آپ نے پاکستان ہجرت کی۔حبیب ولی محمد کا تعلق ایک صنعتی کاروباری خاندان سے تھا تاہم آپ کو بچپن ہی سے گلوکاری کا شوق تھا اور ممبئی میں ایک مقابلے میں بہترین گلوکار کا مقابلہ بھی جیت چکے تھے، اس مقابلے میں 1200 افراد شریک تھے۔آپ نے گلوکاری کی تربیت استاد لطافت علی خان سے حاصل کی۔حبیب ولی محمد کو شہرت، بہادر شاہ ظفر کی غزل "لگتا نہیں ہے دل میرا اجڑے دیار میں” گانے سے ملی۔اس کے علاوہ ان کی گائی ہوئی غزل "کب میرا نشیمن اہل چمن، گلشن میں گوارا کرتے ہیں” کو بھی بڑی شہرت ملی۔حبیب ولی محمد نے متعدد ملی نغمے بھی گائے جنہوں نے ملک گیر شہرت حاصل کی۔حبیب ولی محمد نے چند فلموں کے لیے بھی گانے ریکارڈ کرائے جو ان کے منفرد انداز کی وجہ سے عوام میں مقبول ہوئے۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button