پاکستانتازہ ترین

مشاہد حسین کا سیالکوٹ ورکنگ باؤنڈری سے ملحقہ دیہاتوں کا دورہ

اسلام آباد(پریس ریلیز):چیئرمین سینیٹ ڈیفنس کمیٹی سینیٹر مشاہد حسین سید نے وزیراعظم میاں محمد نواز شریف پر زور دیا ہے کہ وہ آئندہ ہفتے کھٹمنڈو نیپال میں ہونے والی سارک کانفرنس میں پاکستانی بے گناہ شہریوں کی بھارتی شیلنگ کی وجہ سے مالی و جانی نقصان پر پُرزور احتجاج ریکارڈ کروائیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے سیالکوٹ ورکنگ باؤنڈری سے ملحقہ دیہاتوں کے دورے پر کیا۔ سینیٹر مشاہد حسین سید کے ہمراہ سینیٹر محسن خان لغاری بھی موجود تھے جو کہ کسی بھی پارلیمانی کمیٹی کا پہلا دورہ ہے ۔ قبل ازیں سینٹ ڈیفنس کمیٹی کو ڈی رینجرز میجر جنرل خان طاہر نے دو گھنٹے کی تفصیلی بریفنگ دی جس میں انہوں نے بھارتی جارحیت اور مختلف اقدامات سے آگاہ کیا۔ ڈیفنس کمیٹی نے پاک بھارت سرحد سے ملحقہ شیلنگ سے متاثرہ علاقوں کا دورہ کیا اور متاثرہ افراد سے دلی ہمدردی کا اظہار کیا ۔ انڈین ملٹری فورس سے 60میٹر کے فاصلے پر دھمالہ گاؤں کے موقع پر میڈیا سے بھی بات چیت کی ، سینیٹر مشاہد حسین سید نے کا کہنا تھا کہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے اقتدار میں آنے سے بھارتی لب ولہجہ روز بروز پاکستان مخالف ہو تا جا رہا ہے جو کہ بھارت کے جارحانہ عزائم کی عکاسی کرتا ہے ،انہوں نے مودہ اور اس کی کابینہ کے جارحانہ بیانات کو غیر ذمہ دارانہ قراردیا ،اس سلسلے میں ان کا کہنا تھا کہ صرف اکتوبر کے مہینے میں بھارتی فوج کی طرف سے پاکستانی علاقوں پر 31ہزار872مارٹر گولے برسائے گئے جو کہ 1971 ؁ء کی پاک بھارت جنگ سے بھی زیادہ ہے ۔ سینیٹر مشاہد حسین سیدنے پاکستان رینجرز کے آفیسر اور جوانوں سے بھی ملاقات کی او انہیں دفاع پاکستان کی فرنٹ لائن فورس قرار دیا ۔انہوں نے ان کے بلند حوصلے کی تعریف کرتے ہوئے پاکستان زندہ باد، قائداعظم زندہ باد کے نعرے بھی بلند کئے۔ اس موقع پر دیہاتیوں کی کثیر تعداد نے وفد کو بھارتی شیلنگ سے ہونے والے جانی و مالی نقصان سے آگاہ کیا۔ سینیٹر مشاہد حسین سید نے کہا کہ انہوں نے بھارتی جارحیت کے حوالے سے اقوام متحدہ کے عسکری مبصر گروپ کے نئے سربراہ میجر جنرل دیالی جانسن سکائی کو اسلام آباد میں ہونے والی ملاقات میں آگاہ کیا ہے ۔ سینیٹر مشاہد حسین سید اور سینیٹر محسن لغاری نے شہید ہونے والے شہریوں کے لواحقین سے اظہا ر ہمدردی کرتے ہوئے فاتحہ خوانی بھی کی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button