تازہ ترینعلاقائی

زندگی بھر داؤدخیل کی تعلیمی سرگرمیوں میں اہم کردار ادا کیا،غلام عباس

داؤدخیل (ضیانیازی سے)زندگی بھر داؤدخیل کی تعلیمی سرگرمیوں میں اہم کردار ادا کیا اور کوشش کی کہ داؤدخیل میں تعلیم کو عام کر کے نوجوانوں کو اعلی مقام پر دیکھوں اور ہر وقت یہی کوشش کی ہے کہ علاقے کے غریب طالب علموں کو سستی اور معیاری تعلیم گھر میں ہی حاصل ہو ان خیالات کا اظہار ہائر سیکنڈری داؤدخیل کے ایس ایس ایس غلام عباس اعوان نے اپنی الوداعی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ چالیس سال تک شعبہ تعلیم سے وابستہ رہا ہوں آج میرا سکول میں آخری دن ہے لیکن آپ لوگوں کے ساتھ میرا زندگی بھر کا رشتہ قائم و دائم رہے گا اور میری کوشش ہو گی کہ جب بھی سکول کو میری ضرورت پڑے گی میں حاضر ہو ں گا میری صحت اب مجھے مزید تدریسی عمل کو جاری رکھنے کی اجازت نہیں دیتی جس کی وجہ سے ریٹائرمنٹ لے لی انہوں نے کہا کہ 1975میں سینٹر سکول بالا سے تعلیمی سفر کا آغاز کیا اور 31جنوری 2015 کو اختتام پذیر ہو گیا ہے لیکن مجھے آج بہت خوشی ہے کہ میں داؤدخیل ہائر سیکنڈری سکول میں ایف ایس سی کی کلاسوں کا باقاعدہ اجراء ہو چکا ہے اور ہائر سیکنڈری سکول کو بنے 26 سال بعد یہاں ایف ایس سی کی کلاسیں شروع ہوئیں اور پہلے ہی سال سکول نے شاندار رزلٹ دیا اور 30طالب علموں میں سے 25نے شاندار نمبروں سے کامیابی حاصل کی جس میں سکول کے اساتذہ کی ٹیم کی بھر پور محنت شامل تھی اور میری نوجوان ٹیم نے بھی ہائر سیکنڈری سکول کی کلاسوں میں بھر پور محنت کی جس سے علاقے کہ غریب بچوں کو گھر میں ہی تعلیم حاسل کرنے کے مواقع میسئر ہوئے اور اس وقت ہمارے سکول کے پہلے بیج کے دس طالب علم بی ایس کر رہے ہیں آج دوستوں اور اساتذہ نے مجھے جو پیار دیا ہے وہ مدتوں یاد رکھوں گا اور کھبی بھی نہیں بھلا سکوں گا سکول پرنسپل سعد رسول نے کہا کہ میں1978میں خود اس سکول میں پڑھا ہوں اور غلام عبا س اعوان جیسے اساتذہ کی صلاحیتوں کو محکمہ ایجوکیشن کے اعلی افسروں نے بھی تسلیم کیا ہے آج ہم سے نہایت ہی ملنسار ،قابل استاد جدا ہو رہا ہے داؤدخیل کے بچوں کی تعلیم کے لیے ہمیشہ انہیں فکر مند دیکھا ایک بار مکتب سکول ضم ہونے لگا تو ان کو بتایا تو فورا ایدھی بن کر لوگوں سے چندہ جمع کیا اور مکتب سکول کے لیے زمین خریدی اور سکول کو بچایا میں تو غلام عباس اعوان کو داؤدخیل کے علم کا ٹاور کہوں گا ان کے جانے سے سکول کا پورا عملہ پریشان ہے غلام رضا ،امیر خان ،اکرم اعوان ،مسعود احمد ،عارف خان و دیگر اساتذہ نے بھی خطا ب کیا اور غلام عبا س اعوان کی تعلیمی میدان میں کاوشوں کو سراہا اور خراج تحسین پیش کیا

یہ بھی پڑھیں  عدم اعتماد میں ووٹ کم پڑے تو قندھار سے لے آئیں گے، اسلم رئیسانی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker