پاکستانتازہ ترین

بھارت میں تشدد سے جاں بحق قیدی ثناء اللہ کی میت پاکستان پہنچ گئی

sana-ullah-ambulance-ap670لاہور(نمائندہ خصوصی) مقبوضہ جموں کی جیل میں پاکستانی قیدی ثناء اللہ کو تشدد کرکے زندگی سے آزاد کردیا گیا، ان کا جسد خاکی وطن پہنچا دیا گیا ہے، ثناء اللہ کی تدفین آج رات ان کے آبائی علاقے میں کی جائے گی، بیٹے نے باپ کے قاتل کو سخت سزا دینے کا مطالبہ کیا۔ 1990ء میں غلطی سے سرحد پار کرجانے والے ثناء اللہ کو عمرقید کی سزاسنائی گئی، وہ مقبوضہ جموں کی کوٹ بھلوال جیل میں عمر قید کاٹ رہے تھے، اتفاق کہیے یا منصوبہ بندی، بھارتی جاسوس سربجیت کی طرح ثناء اللہ بھی جیل میں ہی تشدد کا نشانہ بنے، 3 مئی کو سابق بھارتی فوجی نے ثناء اللہ کے سر پر کلہاڑی سے وار کیا جس سے وہ شدید زخمی ہوکر کومے میں چلے گئے، ثناء اللہ 7 روز تک اسپتال میں زیرعلاج رہے اور بالآخر زندگی کی جنگ ہار گئے۔ موت کی خبر ملتے ہی سیالکوٹ کے نواحی گاوٴں اور میں واقع ثناء اللہ کے گھر میں کہرام مچ گیا۔ ثناء اللہ کے بیٹے خرم نے اپنے والد کے قاتلوں کو سخت سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے، والد کو قتل کرنیوالے ملزم کو کڑی سزا دی جائے۔ ثناء اللہ کا جسد خاکی ان کے آبائی شہر سیالکوٹ پہنچادیا گیا ہے، اسپتال میں پوسٹ مارٹم کیا جارہا ہے، ان کی تدفین آج رات سیالکوٹ کے گاوٴں اور آبائی قبرستان میں کی جائے گی، پاکستان نے ثناء اللہ پر حملے کی بین الاقوامی سطح پر تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں  وزیر ریلوے سے استعفے کے مطالبے کی قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker