تازہ ترینعلاقائی

ڈیرہ غازی خان:کھوسہ اورلغاری خاندان اپنی آبائی نشستوں سے محروم

dgkhanڈیرہ غازی خان(جنید ملک سے)کھوسہ اور لغاری خاندان اپنی آبائی نشستوں سے محروم۔ڈیرہ غازی خان کی سیاست میں اپ سیٹ،مڈل کلاس سے امیدوار نمائندئے منتخب۔قبائلی سرداروں کا مقامی سیاست پر سے طلسم ختم ہونے لگا۔تفصیلات کے مطابق ڈیرہ غازی خان ک علاقائی سیاست میں اپ سیٹ سے کھوسہ اور لغاری خاندان اپنی آبائی نشستوں سے محروم ہوگئے۔موجودہ لغاری چیف سردار جمال خان لغاری اپنی آبائی نشست این ائے 172پر مسلم لیگ نواز کے امیدوار ڈاکٹر حافظ عبدالکریم سے شکست کھا کر لغاری خاندان کی مضبوط ترین تصور ہونے والی نشست سے محروم ہو گئے ۔لغاری خاندان کو 1970کے عام انتخابات میں بھی اسوقت شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا جب نواب محمد خان لغاری کو ڈاکٹر نذیر احمد نے شکست دی تھی۔اور اسی طرح 43سال بعد نواب محمد خان لغاری کے پوتے موجودہ لغاری چیف سردار محمد جمال خان لغاری بھی ایک مڈل کلاس سے امیدوار ڈاکٹر حافظ عبدالکریم کے ہاتھوں شکست کھا گئے ۔حسن اتفاق یہ ہے کہ دونوں بار ہارنے والے لغاری سردار اپنے وقت کے لغاری چیف بھی تھے اور اسی طرح دونوں بار جیتنے والے امیدواروں کا تعلق ڈیرہ غازی خان کی مڈل کلاس سے تھا اور دونوں ہی ڈاکٹر تھے جس میں ڈاکٹر نذیر احمد طب کے شعبہ سے وابستہ تھے جبکہ ڈاکٹر حافظ عبدالکریم کے پاس پی ایچ ڈی کی ڈگری ہے۔اسی طرح ڈیرہ غازی خان شہر کی صوبائی نشست پر کھوسہ خاندان کے مستقبل کے چیف سردار حسام الدین خان کھوسہ بھی ایک عوامی نمائندئے سید عبدالعلیم شاہ سے شکست کھا گئے۔جبکہ اس سے پہلے بھی 2002کے عام انتخابات میں کھوسہ خاندان کے سردار سیف الدین خان کھوسہ کو سید عبدالعلیم شاہ کے ہاتھوں شکست کھانا پڑی تھی۔وقت گذرنے کے ساتھ ساتھ بڑھتی ہوئی بیداری اور سیاسی شعور کے سبب قبائلی سرداروں کا شہری حلقوں میں سیاست کرنا روز بروز مشکل سے مشکل تر ہوتا جارہا ہے۔جبکہ ڈیرہ غازی خان کے دیہی حلقوں میں مقامی سرداروں کا اثر ورسوخ تا حال برقرار اور قائم ہے۔

یہ بھی پڑھیں  ٹیکسلا:سی پیک منصوبہ پاکستان کی سر زمین پراکیسویں صدی کا خوشحال ترین منصوبہ ہے، شیخ زیشان سعید

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker