تازہ ترینعلاقائی

ٹیکسلا:برما میں گزشتہ چالیس برس سے مسلمانوں کی نسل کشی کی جارہی ہے،حافظ عبدالرؤٖف

ٹیکسلا(نا مہ نگار)برما میں گزشتہ چالیس برس سے مسلمانوں کی نسل کشی کی جارہی ہے اور مسلمانوں کی اکثریت کو اقلیت میں تبدیل کیا جا رہا ہے، لیکن عالمی طاقتیں خاموش ہیں ،بدھ مت کے مذہبی پیشوا اورحکومت مسلمانوں کے قتل میں برابر کی شریک ہے، سندھ و بلوچستان میں امدادی سرگرمیوں سے علیحدگی کی تحریکیں دم توڑ رہی ہیں۔ مسلمانوں کو قتل کرنے والے جہنم کے کتے ہیں ، اسلام بے گناہوں کو قتل کرنے کا حکم نہیں دیتا ،،فلاح انسانیت نے مہاجر روہنگیا مسلمانوں کے لیے ایک سو شیلٹر تعمیر کر دیے ہیں جن میں چھ سو سے زائد افراد رہائش پذیر ہیں ، بلوچستان اور تھرپارکر میں بھی واٹر منصوبوں کی تعمیر جاری ہیں ان خیالات کا اظہار جماعۃ الدعوۃ کے فلاحی ادارے فلاح انسانیت فاؤنڈیشن کے چئیرمین حافظ عبدالرؤف نے مقامی ہوٹل میں صحافیوں کے اعزاز میں افطار ڈنر سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ روہنگیا مسلمانوں کی منصوبہ کے تحت نسل کشی کی جارہی ہیں ان کی بستیوں کو جلایا جا رہا ہے بدھ مت کے پیروکار انسانیت سوز ظلم کر رہے ہیں جس کی وجہ سے وہ اپنے گھروں اور بستیوں کو چھوڑ کر ہجرت کرنے پر مجبور ہو گئے ہیں مسلمانوں کی اس نسل کشی پر عالمی طاقتوں نے کوئی کردار ادا نہیں کیا اور اپنے دہر ے معیار کے باعث خاموش ہیں انہوں نے کہا کہ حافظ سعید کے حکم پر فلاح انسانیت فاؤنڈیشن نے روہنگیا مسلمانوں کے لیے دو کروڑ کی مالیت سے ایک سو شیلٹر تعمیر کر دیئے ہیں جن میں چھ سو سے زائد افراد کے رہنے کے انتظام ہے ان شیلٹرز میں ان کو خوراک اور طبی امداد بھی فراہم کی جا رہی ہے فلاح انسانیت ایک ہزار شیلٹرز تعمیر کرے گی انہوں نے کہا کہ تھر پارکر اور بلوچستان میں بھی فلاح انسانیت فاؤنڈیشن کے واٹر منصوبے مکمل کیے جا چکے ہیں جبکہ کروڑوں روپے کے منصوبوں پر کام جاری ہے انہوں نے کہا کہ رمضان المبارک کا مہینہ ایثار کا مہینہ ہے اس مہینہ میں مجبور اور بے بس مسلمانوں کو ضرور یاد رکھنا چاہیے اور دل کھول کر عطیات دینے چاہیں انہوں نے کہا کہ سندھ و بلوچستان میں امدادی سرگرمیوں سے علیحدگی کی تحریکیں دم توڑ رہی ہیں۔ ملک دشمن این جی اوز پر پابندی ضروری ہے۔غیر ملکی دباؤ قبول کرنے سے دشمنان اسلام کے لئے راستے ہموار ہوں گے۔غیر ملکی این جی اوز نے کئی ملکوں کو برباد کیا اب پاکستان ان کا خصوصی ہدف ہے انہوں نے کہا کہ جماعۃ الدعوۃ اسلام آباد کی جانب سے پانچ ہزار سے زائد خاندانوں کے لیے تھر پارکر میں رمضان پیکج کے تحت خشک راشن تقسیم کیا جا چکا ہے بلوچستان کے وہ علاقے جہاں علاج معالجہ کی سہولیات میسر نہیں ہیں ان علاقوں کو خاص طور پر ترجیح دی جارہی ہے۔ وہ دوردرازکے علاقے جو حکومت کی توجہ سے محروم ہیں جماعۃالدعوۃ وہاں ریلیف سرگرمیوں کاجال بچھارہی ہے۔کسی جگہ آگ لگ جائے یا کوئی اور حادثہ ہو تو فوری طور پر ریسکیو کی ٹیمیں پہنچ کر امدادی سرگرمیاں سرانجام دے سکیں

یہ بھی پڑھیں  پاکستان میں کورونا کے مریضوں کی تعداد 50 ہزار سے تجاوز کرگئی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker