پاکستانتازہ ترین

پیپلزپارٹی آج یوم سیاہ منا رہی ہے

کراچی(نمائندہ خصوصی) پیپلزپارٹی جنرل ضیاء الحق کی جانب سے 1977 میں اس وقت کے وزیراعظم ذوالفقار علی بھٹو کا تختہ الٹنے کے خلاف آج ملک بھرمیں یوم سیاہ منارہی ہے۔ پاکستان پیپلز پارٹی کی جانب سے جنرل ضیاء الحق کی جانب سے ایک منتخب حکومت کا تختہ الٹنے کے خلاف آج ملک بھر میں یوم سیاہ منایا جارہا ہے اور اس سلسلے میں ملک کے مختلف شہروں میں احتجاج اور پروگرامات منعقد کئے جا رہے ہیں۔ پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین اورسابق صدر آصف علی زرداری نے اپنے پیغام میں کہا ہے کہ 5 جولائی ہماری قومی تاریخ کا ایک سیاہ ترین دن ہے۔ ایک آمر نے منتخب وزیراعظم کی حکومت کا تختہ الٹا اور بعد میں عوامی رہنما کو پھانسی دے دی گئی۔ انھوں نے کہا کہ جنرل ضیا کے جانے کے بعد جمہوری قوتوں نے بڑی حد تک 1973ء کے متفقہ آئین کو بحال کر دیا، تاہم انتہاپسندی اور غیرریاستی عناصر جہاد اور فرقہ واریت  کے نام پر ملک و قوم کےلئے خطرہ بنی ہوئے ہیں۔ آج کے روز ہمیں اس عزم کا اعادہ کرنا چاہیئے کہ پاکستان کو ایک جمہوری، ہمہ جہت اور اعتدال پسند معاشرہ بنائیں گے، آج  ہمیں یہ عہد بھی کرنا ہے کہ حقوق غصب کرنے والوں کوسخت سزائیں دی جائیں گی۔چیئرمین پیپلزپارٹی  بلاول بھٹو زرداری نے یوم سیاہ کے حوالے سے اپنے پیغام میں کہا ہے کہ جنرل ضیاء الحق کا بویا ہوا بیج اب درخت بن گیا۔ جنرل ضیا نے جومسلط کیا اس کا نتیجہ پاکستان آج تک بھگت رہا ہے۔ پیپلز پارٹی کے رہنما اور سینیٹر رحمان ملک کا کہنا تھا کہ 5 جولائی 1977 کو جنرل ضیاء نے آئین توڑا، جمہوریت پر شب خون مارا اور منتخب وزیراعظم کو جیل بھیجا، ضیاء الحق اپنے پیچھے دہشت گردی، انتہا پسندی اور فرقہ واریت چھوڑگئے۔

یہ بھی پڑھیں  سرکاری حج سکیم کی عدم قرعہ اندازی کے باعث 3لاکھ 90ہزار درخواست گزاراضطراب کا شکار

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker