تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیرو:عید گاہ روڈپرفلورمل کے مالکان کاساتھیوں کے ہمراہ دکاندارپرغنڈہ گردی کی انتہا

بھائی پھیرو(نامہ نگار)عید گاہ روڈبھائی پھیرو پر فلور مل کے مالکان کاساتھیوں کے ہمرا ہ دکاندار پر غنڈہ گردی کی انتہا۔آٹے کے چھ ہزار روپے نہ دینے پر 40کے قریب مسلح غنڈوں کا دکان پر دھاوہ ۔عید گاہ روڈ میں بھگڈرمچ گئی ۔ پورے علاقہ میں خوف و حراس پھیل گیا ۔متوفی حاجی شفیق نے بھاگ کر جان بچائی ۔غنڈے بڑھکیں مار کر للکارتے رہے آج تمہیں نہیں چھوڑیں گے ۔آج تمہارے اکلوتے بیٹے کو اٹھا کر لے جائیں گے اور تجھے آٹے کے پیسے نہ دینے کا مزہ چکھائیں گے بعد ازاں دکان میں داخل ہوکردکاندار کو وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنایا ،غلیظ گالیاں دیں اور دکان میں توڑ پھوڑ کرکے دھشت پھیلاتے ہوئے فرار ہوئے ۔مقامی تھانہ سٹی پولیس کابااثر فلور مل مالکان کے خلاف مقدمہ درج کرنے سے انکار۔ملزمان کی طرف سے آئے دن کی سنگین نتائج کی دھمکیوں سے مرعوب دکاندارذہنی مریض بن کردو دن بعدہی ہمیشہ ہمیشہ کیلئے اس دنیا کو چھوڑ کراپنے خالق حقیقی سے جاملا بتایا جاتا ہے کہ عید گاہ روڈ کے دکاندار حاجی محمد شفیق شاہین نے بھائی پھیرو بائی پاس پر واقع طارق نواز فلور ملز سے پندرہ ہزار روپے مالیت کا آٹا بطور ادھار لیا تھا جس کے چند دن بعد ہی د کان دار نے سات ہزار روپے ادا کردئے بعد ازاں تھوڑے دن بعد ہی عامر نواز نے دکاندار کو فون پر کہا کہ آپ ہمارے چھ ہزار روپے کیوں نہیں دیتے تو دکاندار نے کہا دو روز کے بعد آپ کو رقم پہنچ جائے گی جس پر عامر نواز برہم ہوگیا اور چند منٹ بعد ہی رقم لینے کیلئے دکان پر پہنچ گیا اسی اثناء مین دکاندار نے اسے کہا کہ ابھی آپ سے بات چیت ہوئی ہے کہ آپکو چند دن بعد ہی رقم مل جائے گی مگر اس نے ایک نہ سنی اور دکاندار کو غلیظ گالیاں نکالنی شروع کردیں اور دھمکی دی کہ اگر ابھی آپ نے رقم نہ دی تو ہم آپ کو مزا چکھا دیں گے جس پر اہل علاقہ نے ان کا بیچ بچاؤ کروادیا مگر مذکورہ شخص عامر نواز اگلے ہی لمحے اپنے ایک درجن ساتھیوں کے ہمراہ دکان پر پہنچ گیا جسے اہل محلہ نے واپس بھیج دیا تو تین روز کے بعدہی عامر کا بڑا بھائی اویس نوازبھی اپنے غنڈوں کے ہمراہ دکان پر حملہ آورہوگیا اور دکان میں پڑے شوکیسوں کے ہزاروں روپے مالیت کے شیشے توڑ کر فرار ہوگئے دن دیہاڑے ہونے والی غنڈہ گردی کے خلاف دکاندار حاجی شفیق شاہین جب انصاف کے حصول کیلئے درخواست لے کر تھانہ سٹیبھائی پھیرو ا تو ایس ایچ او نے ان کی درخواست کو قربان شبیر سب انسپکٹر کے نام مارک کردیا حاجی شفیق جب سب انسپکٹر قربان شبیرکے پاس گیا مگر کوئی کاروائی نا کی گئی جس پر حاجی شفیق یہ کر واپس آگیااس ملک میں انصاف کی توقع ہی نہیں کی جاسکتی تاہم دوسرے ہی روز اسے سوتے میں دل کا شدید دورہ پڑا جوجان لیواثابت ہوا ۔ حاجی شفیق یہ کہتا ہوا دنیاکو چھوڑ گیا کہ جس شہر میں انصاف نہیں ملسکتا اس شہر میں رہنے کا کیا فائدہ ہمارے نمائندے نے جب بیوہ حاجی شفیق سے بات کی تو انہوں نے بتایا کہ میرا خاوند فلور مل مالکان اور ان کے غنڈوں کی طرف سے آئے دن آنے والی دھمکیوں سے خوف زدہ ہوکر اس دنیا کو خیر باد کہ گیا ہے جبکہ اس کا 15سالہ بیٹا شہباز بھی خوف کے مارے دکان نہیں کھول رہا کہ کہیں غنڈہ عناصر اس کو بھی اغواء کرکے جان سے نہ مار دیں

یہ بھی پڑھیں  اپوزیشن اتحاد کے صادق سنجرانی چیئرمین سینیٹ منتخب

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker