تازہ ترینعلاقائی

پشین:صحافیوں کوشہید کرنا اوردھمکیاں دینا روز کا معمول بن چکا ہے،خلیل اللہ موسیٰ

پشین( بیوروچیف /ملک سعداللہ ترین)ایکسین بی اینڈ آر پشین کی جانب سے صحافیوں کو دی جانیوالی سنگین نتائج کی دھمکیوں اور صحافیوں کے گھروں پر لشکر کشی کی کوشش نے صوبہ بھر کے صحافیوں کو دیوار سے لگانے اور بندوق اٹھانے پر مجبور کردیا ہے صحافیوں کو شہید کرنا اور دھمکیاں دینا روز کا معمول بن چکا ہے جمہوریت کے علمبرداروں نے صحافیوں کو تحفظ فراہم نہیں کیا جسکی وجہ سے سرکاری آفیسروں کے ہاتھوں یا تو صحافیوں کو شہید کیا جاتا ہے یا زدوکوب و انکے گھروں پر لشکر کشی کی کوشش کی جاتی ہے ایکسین بی اینڈ آر اپنی کرپشن وکمیشن چھپانے کیلئے صحافیوں کوڈرانے دھمکانے پر اترآیا ہے جسکا صحافیوں پر کوئی فرق نہیں پڑتا ان خیالات کا اظہار کونسل آف آل بلوچستان پریس کلبز (رجسٹرڈ) کے صوبائی سنیئر نائب صدر خلیل اللہ موسیٰ خیل نے مشاورتی کونسل و ٹرائبل یونین آف جرنلسٹ کے اجلاس سے خطاب کے دوران کیا انہوں نے کہا کہ ایک تو پشین میں ایکسین کی جانب سے پشین کے مقامی صحافیوں کو حق لکھنے اور بولنے پر موت کے منہ میں دھکیلا جارہاہے تو دوسری جانب اوستہ محمد میں صحافی ظفر اللہ جتک ارشاد مستوئی سمیت بے شمار صحافیوں کو شہید کئے گئے ہیں لیکن بدقسمتی سے شہید صحافیوں کے قاتلوں کو تاحال گرفتار نہ کرنا اور ایکسین بی اینڈ آر پشین کیخلاف فوری کارروائی نہ ہونا ایک سوالیہ نشان بن چکا ہے انہوں نے کہا کہ ایکسین بی اینڈ آر پشین کی جانب سے صحافیوں کو دی جانیوالی دھمکیوں اور اوستہ محمد کے صحافی ظفر جتک شہید کے قاتلوں کی عدم گرفتاری کیخلاف احتجاجی تحریک کا اعلان عید الفطر کے بعد ٹرائبل یونین آف جرنلسٹ کریگی

یہ بھی پڑھیں  قائد اعظم محمد علی جناح ؒ کایوم ولا دت آج عقیدت و احترام سے منایا جائیگا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker