شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / پاکستان / بجلی بحران ،نگراں وزیر اعظم کا ساڑھے 22 ارب جاری کرنے کا حکم

بجلی بحران ،نگراں وزیر اعظم کا ساڑھے 22 ارب جاری کرنے کا حکم

wapdaاسلام آباد(بیوروچیف) بجلی کی بدترین لوڈشیڈنگ سے عوام کو ”واقفیت “دلانے کے بعدپاورپلانٹس کی مرمت کی وجہ سے مزید لوڈشیڈنگ سے بچنے کیلئے بالآخر وزیراعظم نے پاور سیکٹر کو ساڑھے بائیس ارب روپے جاری کرنے کا حکم دیدیا۔ بجلی کی لوڈشیڈنگ سے متعلق وزیراعظم کی زیرصدارت ہونیوالے اجلاس کو بریفنگ میں وفاقی وزیرپانی و بجلی مصدق ملک نے بتایاکہ قادر پور مگسی فیلڈ میں منگل سے سالانہ مرمت شروع ہورہی ہے جس کی وجہ سے بجلی کی کمی مزید آٹھ سو میگاواٹ تک ہوسکتی ہے اورمتبادل کے طورپر ڈیزل فراہم کیاجارہاہے ۔اُنہوں نے کہاکہ وصولیاں ایک ماہ میں مکمل کرنا ممکن نہیں ، منگل تک رقم مل جائے تو دو ہزار میگاواٹ اضافہ ہوسکتاہے ۔وزیراعظم نے فوری طورپر بائیس ارب روپے جاری کرنے کا حکم دیتے ہوئے کہاکہ مرمتی کام کے دوران متبادل کے طورپر رقم فراہم کی جارہی ہے ، سب کو مل کر ملک کو بحران سے نکالناہوگا۔ وزیرپانی و بجلی نے بتایاکہ کل پیداوار ی صلاحیت 10,437میگاواٹ جبکہ طلب 14,900میگاواٹ ہے اور اس طرح شاٹ فال 45,00میگاواٹ موجودہے ۔

یہ بھی پڑھیں  گوجرانوالہ: مسلم لیگ(ن) کی ریلی کیلئے سرکاری وسائل کااستعمال