پاکستانتازہ ترین

الطاف حسین کی تقاریرکےمعاملے پربہت صبرکیا لیکن اب برطانیہ سےبات کرنے کاوقت آگیا، چوہدری نثار

اسلام آباد(بیوروچیف) وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار کا کہنا ہےکہ الطاف حسین نے گزشتہ روز اپنی تقریر میں تہذیب اور شرافت کی تمام حدیں پار کردیں ان کی جانب سے فوج اور رینجرز کے خلاف گالی گلوچ سمجھ سے باہر ہے لہٰذا الطاف حسین کی تقاریر کے معاملے پر بہت صبر کیا لیکن اب اس پر برطانیہ سے بات کرنے کا وقت آگیا ہے۔ ایم کیوایم کے قائد الطاف حسین کی جانب سے گزشتہ روز کی گئی تقریر پر اپنے رد کا اظہار کرتے ہوئے ایک بیان میں وزیرداخلہ چوہدری نثار نے کہا کہ الطاف حسین کی جانب سے سکیورٹی اداروں کے خلاف بدترین زبان استعمال کی گئی، الطاف حسین نے ہمارے دشمن بھارت کی زبان استعمال کی اور انہوں نے اپنی تقریر میں تہذیب اور شرافت کی تمام حدیں پار کردیں ان کی تقاریر اشتعال انگیزی کی آخری حدوں کو چھو رہی ہیں، الطاف حسین کے معاملے پر ہر طرح سے صبر و تحمل کا مظاہرہ کیا لیکن اب ان کی تقاریر پر برطانیہ سے بات کرنے کا وقت آگیا ہے۔چوہدری نثار نے کہا کہ سکیورٹی اداروں کے خلاف بدزبانی ناقابل برداشت ہے، بیرون ملک سے دفاعی اداروں پر گالیوں کی اجازت نہیں دے سکتے، الطاف حسین کی صورتحال کی ذمہ دار فوج یا رینجرز نہیں، لگتا ہے برطانیہ میں ان کے کرتوتوں کی وجہ سے ان کے گرد گھیرا تنگ ہورہا ہے اور اس کا غصہ اور مایوسی اپنے اداروں پر نکالا جارہا ہے۔ وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ اردو بولنے والی کمیونٹی مہذہب اور تہذیب یافتہ ہے لیکن الطاف حسین اس تضحیک کررہے ہیں۔واضح رہے کہ گزشتہ روز الطاف حسین نے نائن زیرو پر ٹیلی فونک خطاب میں کہا تھا کہ ڈی جی رینجرز سندھ وائسرائے کا کردار ادا کررہے ہیں اور وہ وزیراعظم نوازشریف کے ذاتی ملازم بن کر اپنے بنیادی فرائض کی ادائیگی میں مجرمانہ غفلت کا مظاہرہ کررہے ہیں،

یہ بھی پڑھیں  ٹیکسلا:پی او ایف اسلحہ سازی کے میدان میں ایک قابل اعتماد اور معتبر نام ہے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker