تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیروبیرون اڈاہ میں غنڈاراج نافذ، اُدھار کی رقم مانگنے پر جوس کارنر و ہوٹل کا فرنیچر توڑ دیا

بھائی پھیرو(نامہ نگار) بھائی پھیروبیرون اڈاہ میں غنڈاراج نافذ، اُدھار کی رقم مانگنے پر جوس کارنر و ہوٹل کا فرنیچر توڑ دیا گیا قریبی کھڑی دو عدد موٹر سائیکلیں جلادی گئیں مزاحمت پرہوٹل مالک کے بھائی محمد یسین کوفائر مار کر شدید زخمی اور بیٹوں کو ڈنڈون سوٹوں سے مار مار کر ادھ موا کردیا گیا، ملزمان جاتے ہوئے ہوٹل سے لاکھوں روپے نقدی بھی لے اُڑے، مقامی پولیس نے 6 روز گزرنے کے بعد اعلیٰ حکام کے حکم پر مقدمہ درج کر لیا۔ تاہم مقامی پولیس با اثر ملزمان پر ہاتھ ڈالنے سے گریزاں،غریب محنت کش حاجی غلام رسول کی اعلیٰ حکام سے ملزمان کی فوری گرفتاری کے لیے اپیل۔تفصیلات کے مطابق۔بھائی پھیروبیرون اڈاہ میں غریب محنت کش حاجی غلام رسول نے جوس شاپ وکھانے کا ایک ہوٹل بنا رکھا تھا جہاں پر وہ دن رات محنت مزدوری کرکے اپنے بال بچوں کا پیٹ پال رہا تھا جبکہ مورخہ 12-5.2013 تقریبا 9 بجے شہر کے بااثر غنڈے کاشف،پپو،گڈو،وحید،سہیل و دس کس نا معلوم آدھمکے اور جوس کا آرڈر دیا اور جوس کے پیسے وبقایا ادھار کے 900سو روپے مانگنے پرہوٹل کے مالک حاجی غلام رسول کے بیٹے بلال کو مارنا پیٹنا شروع کردیاجسے چھڑوانے کے لیے بلال کا چچا یسٰن آگے بڑھا تو ملزمان نے اُسے فائر مارکر شدید زخمی کردیاچچا کو بچانے کے لیے محمد اقبال آگے بڑھا تو اُسے ڈنڈوں اور سوٹوں سے مار مار کر ادھ موا کردیاگیا جبکہ ملزمان نے اسی پر ہی اکتفا نہ کیا بلکہ مزید غنڈا گردی کا مظاہرہ کرتے ہوئے جوس کی شاپ کی جوسر مشینیں،پنکھے اور ہوٹل کا تمام فرنیچر توڑ دیا اور ہوٹل کے باہر کھڑی 2عددموٹرسائیکلیں بھی جلادی بعدازاں انصاف کے حصول کے لیے مدعی حاجی غلام رسول سٹی تھانہ بھائی پھیرو کی خاک چھانتا رہا مگر تھانہ میں غریب محنت کش کی کوئی شنوائی نہ ہوسکی با لآخر 6روز گزرنے کے بعد اعلیٰ حکام کے حکم پر سٹی تھانہ بھائی پھیرو پولیس نے مقدمہ تو درج کرلیا مگر بااثر ملزمان پر مقامی پولیس ہاتھ ڈالنے سے گریزاں ہے آخر میں مدعی حاجی غلام رسول نے اعلیٰ حکام سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ میں غریب آدمی ہوں اور ملزمان با اثر ہونے کی وجہ سے شہر میں دندناتے پھر رہے ہیں اور مقامی پولیس اُنہیں گرفتار کرنے کی بجائے تحٖفظ فر اہم کررہی ہے۔

یہ بھی پڑھیں  بھائی پھیرو:ڈکیتی کی انوکھی واردات

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker