تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیرو:پنجاب کی معروف سیر گاہ ہیڈ بلوکی پر بدترین ٹریفک جام

بھائی پھیرو(نامہ نگار)پنجاب کی معروف سیر گاہ ہیڈ بلوکی پر بدترین ٹریفک جام ۔ گھپ اندھیرے میں کئی گھنٹے تک سیر کے لئے آئی خواتین ، بچے ،اور جوان ہزاروں کی تعداد میں ٹریفک میں پھنسے چیختے چلاتے رہے ۔اُوبا ش نوجوان خواتین کو تنگ کرتے رہے ۔ شام کے بعد ڈری ، سہمی اور چھیڑ خوانی سے تنگ خواتین کی چیخوں نے آسمان سر پر اٹھا لیا ۔۔ تفصیلات کے مطابق پنجاب کی معروف سیر گاہ ہیڈ بلوکی پرٹرو کے روز ہزاروں کی تعداد میں لوگ سیر سپاٹے کے لئے آئے مگر وہاں ٹریفک جام ہو گئی ۔کئی گھنٹے تک ٹریفک جام ہونے سے کاروں ، ٹرکوں ، ویگنوں ، بسوں کی میلوں لمبی قطاریں لگ گئی ۔لوگوں نے فون کر کر کے ہیڈ بلوکی انتظامیہ کو مدد کے لئے پکارا مگر بے حس محکمہ انہار نے عوام کی پکاروں پر کوئی توجہ نہ دی ۔پورا علاقہ گھپ اندھیرے میں ڈوبا رہا۔ رات ڈھلنے کے بعد اندھیرے کا فائدہ اٹھا کر بعض اُوباش نوجوانوں نے خواتین اور نوجوان لڑکیوں سے چھیڑ چھاڑ شروع کر دی ۔ تو سہمی ، ڈری اور چھیڑ خوانی سے تنگ عزت دار خواتین نے چیخنا ، چلانا شروع کر دیا جس سے پوری فضا میں خوشی کئے قہقوں کی بجائے دل دوز چیخیں پھیل گئیں ۔با ر بار ٹیلی فون کرنے پر بھی جب سرکاری ملازمین مدد کے لئے نہ آئے تو سینکڑوں مردوں اور خواتین نے سرائے مغل روڈ پر جمع ہو کر سرکاری محکموں کے خلاف زبردست نعرے بازی کی ، سینہ کوبی کی،اور حکومت کی بے حسی کے خلاف ماتم کیا ۔کچھ نوجوان ہیڈ بلوکی کی حساس پلوں کے اُوپر لگی محکمہ انہار کی حساس مشینری تک پہنچ گئے اور ان سے چھیڑ چھاڑ شروع کر دی تو محکمہ انہار کے افسران بھاری نفری لیکر آگئے اور ٹریفک کو کنٹرول کرنا چاہا مگرمجمعے کے آگے چند سو ملازمین بے بس ہو گئے ۔آدھی رات تک لوگ ذلیل و خوار ہوتے رہے اور ضلعی انتظامیہ کی بد انتظامی کے خلاف سراپا احتجاج بنے سڑکوں پر ذلیل و خوار ہوتے رہے ۔عوامی و سماجی حلقوں نے اس بد انتطامی کا سخت نوٹس لے کر عوام کو آئندہ تحفظ فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے

یہ بھی پڑھیں  وفاق المدارس العربیہ پاکستان ضلع سیالکوٹ و نارووال کا ہنگامی اجلاس سانحہ راولپنڈی پر قرار داد منظور

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker