پاکستانتازہ ترین

تحریک انصاف ڈی سیٹ،وزیراعظم نےکمیٹی بنا دی

اسلام آباد (بیوروچیف) وزیراعظم کی جانب سے تشکیل دی گئی کمیٹی میں اسحاق ڈار، خواجہ سعد رفیق، پرویز رشید اور عرفان صدیقی شامل ہیں۔ نوازشریف نے کمیٹی کو جے یو آئی اور ایم کیو ایم سے رابطہ کر کے تحریک انصاف کے خلاف تحاریک واپس لینے کیلئے قائل کرنے کی ہدایت بھی کی ہے۔ وزیراعظم نواز شریف نے امید ظاہر کی ہے کہ سیاسی قیادت ماضی کے تلخ تجربات کو بھول کر جمہوری استحکام کیلئے نئے دور کا آغاز کرے گی۔ دوسری جانب حکومت عہدیداروں اور ایم کیو ایم کے درمیان آج ہونے والی ملاقات بھی ملتوی ہو گئی ہے جس کے بعد متحدہ کی پارلیمانی پارٹی کا ہنگامی اجلاس رات آٹھ بجے طلب کر لیا گیا ہے۔ اس سے پہلے وزیر اعظم نواز شریف کی زیر صدارت پارلیمانی رہنماؤں کا اجلاس ہوا جس میں جوڈیشل کمیشن کی رپورٹ اور تحریک انصاف کے کارکنوں کو ڈی سیٹ کرنے کی تحاریک پر تبادلہ خیال کیا گیا۔
ذرائع کے مطابق پارلیمانی رہنماؤں کی اکثریت نے تحریک انصاف کا ڈی سیٹ نہ کرنے کا مشورہ دیا ہے ، بعض رہنماؤں نے تحریک انصاف کے ارکان کو ڈی سیٹ کرنے کی تحاریک کی حمایت کی ہے۔اجلاس میں مسلم لیگ ن نے انکوائری کمیشن کی رپورٹ پر تحریک انصاف کی فیس سیونگ کا فیصلہ کیا ، ایم کیو ایم اور جے یو آئی نے پی ٹی آئی کے ارکان کو ڈی سیٹ کرنے سے متعلق تحاریک واپس لینے کے لیے ایک دن کی مہلت لے لی۔خورشید شاہ نے کہا ہے کہ جے یو آئی اور ایم کیو ایم کو تحاریک واپس لینے کی درخواست کی ہے ، نہیں چاہتے کہ تحریک انصاف کے ارکان کو ڈی سیٹ کیا جائے۔صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے وزیر ریلوے سعد رفیق نے کہا ن لیگ چاہتی ہے کہ پی ٹی آئی پارلیمنٹ میں ہے تو اسے مانے بھی ، تحریک انصاف کو سڑکوں پر دربدر نہیں دیکھنا چاہتے۔عمران خان پارلیمنٹ نہیں آ رہے کیا ان کے پیروں کو مہندی لگی ہے ، پی ٹی آئی کو ان کی دھرنا سیاست پر شرمندہ نہیں کرنا چاہتے ، پی ٹی آئی منتخب پارلمینٹ کو گالیاں دیتی رہی ہے دوسری طرف اس میں بیٹھی بھی ہے

یہ بھی پڑھیں  ٹیکسلا:کینٹ بورڈ الیکشن میں پیپلز پارٹی اکثریتی جماعت بن کر ابھرے گی ، سید دستار شاہ

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker