تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیرو:ڈسٹرکٹ سیشن جج نےامیر جماعت اسلامی پھولنگرکا میڈیکل سٹوردوبارہ کھولنے کا حکم دے دیا

بھائی پھیرو(نامہ نگار)بھائی پھیرو جماعت اسلامی بھائی پھیرو کے امیرکے میڈیکل سٹور کو ڈسٹرکٹ سیشن جج نے میڈیکل سٹور دوبارہ کھولنے کا حکم دے دیا ۔ جماعت اسلامی کے سینکڑوں شباب ملی کے کارکنان کا زبردست احتجاجی مظاہرہ ،مٹھائیاں تقسیم ۔نعرے بازی ۔مظاہرے میں حلقہ پی پی 184اور این اے 142کے امیدواران کی بھی شرکت۔تفصیلات کے مطابق سول ہسپتال کے ڈاکٹر فرخ ہمایوں نے گذشتہ روز سیاسی انتقام کا نشانہ بناتے ہوئے گذشتہ روز جماعت اسلامی بھائی پھیرو کے امیر داؤد پرویز کا میڈکل سٹور بند کر دیا جسے ڈسٹرک اینڈ سیشن جج نے دوبارہ کھولنے کا حکم دے دیا ۔میڈیکل سٹور کھلنے کے بعد شباب ملی جماعت اسلامی کے کارکنان ، صحافی اور شہریوں کی بڑی تعداد میڈیکل سٹور پر جمع ہو گئی اور وہاں میٹھائیاں تقسیم کی گئیں ۔ شباب ملی کے نوجوانوں نے خوشی میں جلوس نکالا اور ڈاکٹر کے خلاف زبردست نعرے بازی کی۔مظاہرین ’’سیاسی انتقام مردہ آباد ،اورٹن ڈاکٹر ، شرابی ڈاکٹر مردہ آباد کے نعرے لگا رہے تھے ۔اس موقع پر جماعت اسلامی کے نوراحمد ڈوگر نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہم رات کو بلدیاتی الیکشن کے حوالے سے تیاری کررہے تھے جس میں ہمارے آٹھ امیدوارن کا اعلان کیا گیاتھا یہاں کے صاحب اقتدار کو یہ بات ہضم نہیں ہوئی پہلے یہ جھوٹے پرچوں سے عوام کو تنگ کرتے تھے لیکن اب یہ ہوچھے ہتھکنڈوں پر اتر آئے ہیں یہ بات کا واضح ثبوت ہے کہ ڈاکٹرفرخ ہمایوں کا اتنی دور سے سفر کوطے کرنا اور داؤد پرویزکے میڈیکل سٹور کو غیرقانونی طور پر سیل کرنا جماعت اسلامی کبھی بھی اس ملک کو کسی کی جاگیرنہیں بننے دینگے کیونکہ قانون سب کیلئے ایک جیسا ہے ،شباب ملی کے صدر ملک عثمان بوٹا نے میڈیا کو بتایا کہ جماعت اسلامی بھائی پھیروکے امیراور سابق کونسلر پر غیر قانونی طور پرسٹورکو سیل کرنا قانون کی دھجیاں بکھیرنے کے مترادف ہے ہماری میاں شہبازشریف سے اپیل ہے کہ ڈاکٹرفرخ ہمایوں کا غیرقانونی داؤدپرویز کا میڈیکل سٹور کو سیل کرنے کا نوٹس لیاجائے اور اس کے مرتکب افراد کو کارروائی کرکے کیفر کردار تک پہنچا یا جائے تب ہم کہیں گے کہ میاں محمد شہباز شریف خادم اعلیٰ ہے

یہ بھی پڑھیں  داؤدخیل:خود کومیانوالی کا فرزند کہنے والاعمران خان اقتصادی راہداری روڈ کی میانوالی سے گزرنے کی مخالفت کررہا ہے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker