تازہ ترینعلاقائی

ٹیکسلا:پسند کی شادی کرنے والے پریمی جوڑے نے غیر قانونی حراساں کرنے پرعدالت کا دروازہ کھٹکھٹا دیا

ٹیکسلا( نا مہ نگار)پسند کی شادی کرنے والے پریمی جوڑے نے تھانہ ٹیکسلا پولیس کی جانب سے غیر قانونی حراساں کرنے پر عدالت کا دروازہ کھٹکھٹا دیا،عدالت نے ڈی ایس پی اور ایس ایچ او کو عدالت میں طلب کرلیا،پریمی جوڑے کی جانب سے بائیس اے کی رٹ معروف قانون دان طاہر محمود راجہ ک جانب سے ایڈیشنل سیشن جج ٹیکسلا کی عدالت میں دائر کی گئی تھی،متاثرہ جوڑے نے انسانی حقوق کی تنظیموں اور پولیس کے اعلیٰ حکام سے قانونی تحفظ فراہم کرنے کی اپیل کی ہے،تفصیلات کے مطابق جمیل آباد ٹیکسلا رہائشی مسماۃ ثنا نعیم نے کچھ عرصہ قبل حطار کے رہائشی فیض اللہ سے کورٹ میرج کی تھی،جبکہ اسکی سوتیلی ماں تعظیم اختر نے اے ایس آئی حبیب احمد کے ساتھ ملی بھگت کر کے جوڑے کو حراساں کرنا شروع کردیا علاوہ ازیں پولیس کی جانب سے انھیں جھوٹے مقدمات میں ملوث کرنے کی دھمکیاں بھی دی گئیں،جس پر مسماۃ نیثنا نعیم نے تنگ آکر طاہر محمود راجہ ایڈووکیٹ کے توسط سے تجمل حسین ہنجرہ ایڈیشنل سیشن جج بطور جسٹس آف پیس ٹیکسلا کی عدالت میں بائیس اے کی رٹ دائر کی فاضل عدالت نے ایس ایچ او سمیت تمام فریقین کو گیارہ اگست کو عدالت طلب کرتے ہوئے نوٹس جاری کردیئے،یاد رہے کہ ثنا نعیم نے 27 جولائی 2015 کو بمطابق شریعت محمدی نکاح کیا جو یونین کونسل حویلیاں میں رجسٹرڈ ہے،

یہ بھی پڑھیں  سبز ہوتی ہی نہیں یہ سرزمیں

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker