پاکستانتازہ ترین

وزیراعظم کا دورہ عیسیٰ خیل، 1 ارب 30 کروڑ خرچ کرنے کا اعلان

میانوالی(نمائندہ خصوصی)وزیراعظم نوازشریف نے میاں والی میں سیلاب سے متاثرہ علاقوں کے دورے کے دوران عیسیٰ خیل کو سیلاب کی تباہی سے بچانے کیلئے1 ارب 30 کروڑ روپے خرچ کرنے کا اعلان کرنے کے ساتھ ساتھ اقتصادی راہداری سے خوشحالی آنے کی نوید بھی سنائیمیانوالی میں سیلاب سے شدید متاثرہ علاقے عیسیٰ خیل کے دورے کے دوران وزیراعظم نوازشریف کو ضلعی انتظامیہ نے سیلاب سے ہونے والے نقصانات اور امدادی سرگرمیوں سے متعلق بریفنگ دی۔ ڈی سی او میانوالی طلعت محمود گوندل نے وزیراعظم کو بتایا کہ بارش کے باعث مختلف حادثات میں 7 افراد جاں بحق ہوئے جن کے لواحقین کو 5،5 لاکھ روہے امداد دی گئی۔ سیلاب سے ایک ہزار 535 کچے اور ایک ہزار 157 پکے مکانات گر گئے، جبکہ تحصیل ہیڈ کوارٹر اسپتال کی عمارت کو بھی نقصان پہنچا۔ڈی سی او میانوالی کے مطابق مجموعی طور پر 45 دیہات کی 55 ہزار آبادی متاثر ہوئی، ضلعی انتظامیہ نے متاثرین کے لیے 11 ریلیف سینٹر قائم کیے جبکہ 2 ہزار 214 خیمے اور خوراک کے 9 ہزار 800 تھیلے بھی تقسیم کیے۔بریفنگ کے بعد وزیراعظم نواز شریف نے سیلاب متاثرین میں امدادی سامان تقسیم کیا۔وزیراعظم نوازشریف نے سیلاب متاثرین سے خطاب کے دوران کہا کہ 7افراد کی ہلاکتوں پر افسوس ہے۔ ملک کے پسماندہ علاقوں کو ترقی یافتہ علاقے بنانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ عیسیٰ خیل میں واٹر سپلائی اسکیم کیلئے 20کروڑروپے کی گرانٹ کا اعلان کرتے ہوئے وزیراعظم کا کہنا تھاکہ پاک چین اقتصادی راہداری سے یہ علاقہ بھی مستفید ہوگا۔انہوں نے کہا کہ سیلاب سے بچنے کیلئے بند کی تعمیر لازمی ہے،حکومت سیلاب سے نمٹنے کیلئے اقدامات اور اپنا پورا کردار ادا کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان غریب ملک ہے،آہستہ آہستہ ترقی کا سفر طے کررہے ہیں ۔وزیراعظم نے واپڈا کے نمائندے کی سرزنش کرتے ہوئے کہا کہ و اپڈا کو اپنے سسٹم میں موجود خامیاں فوری دورکرنا چاہیئں،ایسا نہیں ہونا چاہیئے کہ 4کھمبے گرنے سے علاقے کی بجلی چلی جائے

یہ بھی پڑھیں  جب عمران خان کے لیے محبتوں کا سونامی امڈ آیا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker