پاکستانتازہ ترین

استعفوں کا فیصلہ حتمی، کراچی میں پی ٹی آئی کا راستہ ہموار کیا جارہا ہے، فاروق ستار

اسلام آباد(بیوروچیف)ڈاکٹر فاروق ستار نے واضح کردیا کہ استعفیٰ دینے کا فیصلہ حتمی ہے، انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم کیخلاف سازشیں کی جارہی ہیں، کراچی میں بلدیاتی انتخابات کیلئے پی ٹی آئی کیلئے راستہ ہموار کیا جارہا ہے، کراچی آپریشن غیر جانبدار نہیں، 40 سے زائد کارکنان ماورائے عدالت قتل کئے گئے، میری تمام شکایات دیوار سے ٹکرا کر واپس آگئیں۔قومی اسمبلی اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے متحدہ قومی موومنٹ کے پارلیمانی لیڈر ڈاکٹر فاروق ستار پھٹ پڑے، بولے کہ ایم کیو ایم کیخلاف سازشیں کی جارہی ہیں، سماجی، فلاحی، سیاسی اور ہر قسم کی سرگرمیوں پر پابندی عائد کی جارہی ہے، ہمیں انصاف حاصل کرنے سے روکا جارہا ہے، کراچی میں پی ٹی آئی کیلئے بلدیاتی انتخابات کا راستہ ہموار کیا جارہا ہے، سینیٹ، قومی اسمبلی اور سندھ اسمبلی سے استعفوں کا فیصلہ حتمی ہے۔ان کا کہنا ہے کہ کراچی میں آپریشن غیر جانبداری سے نہی ہوا، ہمارے کئی کارکنان لاپتہ ہیں،  آپریشن کے نام پر متحدہ کارکنان کو نشانہ بنایا جارہا ہے، 40 سے زائد کارکنان ماروائےعدالت قتل کئے گئے، گھروں پر چھاپوں کا سلسلہ جاری ہے، گرفتار کارکنوں کا کوئی جوڈیشل ریمانڈ نہیں لیا گیا، کارکنوں کو تیسرے درجے کے شہری کی طرح عدالت میں پیش کیا گیا، متوسط طبقے کو جمہوری کردار ادا کرنے سے روکا جارہا ہے۔فاروق ستار مزید بولے کہ ایم کیو ایم کے مرکز نائن زیرو پر 2 مرتبہ چھاپے مارے گئے، الطاف حسین کی ہمشیرہ کے گھر پر بھی چھاپہ مارا گیا، کراچی آپریشن پر ایم کیو ایم کا میڈیا ٹرائل کیا جارہا ہے، میری تمام شکایات دیوار سے ٹکرا کر واپس آگئیں

یہ بھی پڑھیں  آرمی پبلک اسکول پر دہشت گرد حملے کو ایک سال بیت گیا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker