تازہ ترینعلاقائی

دیپالپور: بقا محمد بگٹی دبنگ پولیس آفیسر ثابت ہوئے، جرائم کی شرح میں رکارڈ کمی

دیپالپور(نامہ نگار ) بقا محمد بگٹی دبنگ پولیس آفیسر ثابت ہوئے جرائم کی شرح میں رکارڈ کمی ہوئی، 70فیصد کرائم ریشو گرگئی ستراڈاکو مارے جاچکے ہیں، مجرمان اشتہاریوں اور برآمد گی منشیات میں میری 11ماہ کی کارکردگی نے پچھلے پانچ سال کی کارکردگی سے زیادہ رہی ہے اے ایس پی بقاء محمد بگٹی تفصیلات کے مطابق اے ایس پی بقاء محمد بگٹی سب ڈویثرنل پولیس آفیسر دیپالپور نے اتحاد پریس کلب دیپالپور سے گفتگو کرتے ہوئے اپنی تعیناتی کے دوران جرائم کو کنٹرول کرنے کے حوالے سے اپنی کوششوں اور کامیابیوں کی تفصیلات سے آگاہ گیا انہوں نے کہا کہ وہ جب تحصیل دیپالپور میں تعینات ہوئے تو یہاں پر آسامان کو چھوتی ہوئی جرائم کی شرح میرے لئے ایک بڑے چیلنج کی حیثیت رکھتی تھی جس پر نے سرکل دیپالپور کوکرائم فری بنانے کے چیلنج کو قبول کرتے ہوئے اپنی ٹیم ترتیب دی اور میٹنگ کرکے متحرک کیا میری 11 ماہ کی تعیناتی میں کیٹیگری اے میں مطلوب سنگین مقدمات میں 316مجرمان اشتہاری گرفتار کیے گئے جبکہ کیٹیگری بی میں مطلوب مجرمان اشتہاری 2011گرفتاراور عدالتی مفروران میں348 گرفتار کیے گئے انہوں نے کہا کہ منشیات فروشوں کے خلاف خصوصی کریک ڈاؤن کا آغاز کیا گیا منشیات فروشوں سے آہنی ہاتھوں نمٹے کا فیصلہ ہوا کسی منشیات فروش کو کوئی رعایت نہیں دی گی اور ایسے ایسے مگر مچھ قسم کے منشیات فروش گرفتارکیے گئے جنہیں آج تک کسی نے ہاتھ نہ ڈالا تھا منشیات فروشوں کے خلاف کارروائی پر اب تک بارہ ہزار دوسو بانوے (12292)لیٹر شراب ، تقریبا173 کلوچرس اور 6کلوافیون، ناجائزہ اسلحہ کے 739ملزمان کو گرفتار کرکے 497پسٹل ، بندوق 160، رائفل 82اور ہزار وں گولیاں برآمد کر لی گئیں مال مسروقہ میں تین کروڑاکتالیس لاکھ اکانوے ہزارایک سو آٹھ روپے برآمدکیے گئے مزید انہوں نے کہا کہ انتہائی خطرناک مجرمان جو ڈکیتی ، راہزنی، اغواء برائے تاوان،قتل ، دہشت گردی اور ڈکیتی معہ زنا جیسی وارداتوں میں پولیس کو انتہائی مطلوب تھے ان میں سے 17مجرمان اشتہاری پولیس مقابلے میں مارے گئے ڈاکوؤں کی ہلاکت سے سرکل دیپالپور میں کرائم میں نمایاں کمی ہوئی ہے انہوں نے بتایا کہ سرکل کے ایس ایچ اوز کو کرائم کو کنٹرول کرنے کے لئے گشت کو مزید موثر بنایاگیااور تفتیش میرٹ کی بنیاد پر کرنے اور کروانے میں خود ہر ایک مقدمہ میں ذاتی طور پر نگہبان رہا اور کبھی کسی قسم کے دباؤکو ہرگز خاطر میں نہ لایا گیا تاکہ کسی بے گناہ کے ساتھ زیادتی نہ ہو میرے دفتر کے دروازے ہروقت عوام کے لئے کھلے رہے بغیر کسی سفارشی کے عام آدمی کے لئے میں ہروقت حاضر رہا ہر جائز کام اور عوام کو انصاف فراہم کرنا میرا اولین ترجیح رہی اورمیں رات گئے تک خود گشت کرتارہااور تھانوں کو چیک کرتا رہا اور سرکل دیپالپور اب عوام کے سامنے ہے میری شب روز کوشش اور پیشہ وارنہ محنت سے میں کسی حدتک کرائم کنٹرول کرنے میں کامیاب رہا ہے سب ڈویثرن دیپالپور اب آپ کے سامنے ہے اور انشاء اللہ میری ٹیم مزید کام کررہی ہے۔ یادرہے اے ایس پی بقاء محمد بگٹی سب ڈویثرنل پولیس آفیسر دیپالپورایک دبنگ پولیس آفیسر کے طور پر پہچانے جاتے ہیں جن کی جرائم کے خاتمے کے حوالے سے کوششوں کو عوامی حلقوں میں انتہائی قدر کی حیثیت سے دیکھا جارہاہے کہ انہوں نے واقعی دیپالپور جو کہ جرائم میں بہت آگے جارہاتھا مگر ان کی تعیناتی اوراس کے بعد فرض شناسی سے اداکی گئی خدمات کے باعث آج عوام نے سکھ کا سانس لیا ہے اور وہ اب پہلے کی نسبت خود کوبہت محفوظ سمجھتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں  ڈسکہ: پولیس کا منشیات فروشوں کے خلاف کریک ڈاؤن

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker