پاکستانتازہ ترین

این اے 122 کےانتخابات کالعدم قرار، دوبارہ پولنگ کا حکم

لاہور(پاک نیوز)تحریک انصاف کےچیئرمین عمران خان نےاسپیکرقومی اسمبلی ایازصادق کی وکٹ اڑادی۔الیکشن ٹربیونل نےاین اے ایک سوبائیس کے انتخابات کالعدم قراردیتے ہوئےدوبارہ پولنگ کاحکم دیدیا۔ایازصادق نےفیصلے کوسپریم کو رٹ میں چیلنج کرنے کا اعلان کردیا۔ الیکشن ٹربیونل لاہورنےقومی اسمبلی کےحلقہ این اے ایک سوبائیس میں دھاندلی کیس کافیصلہ سناتےہوئےعمران خان کاموقف درست قرار دے دیا اوردو ہزارتیرہ کے انتخابات میں سردارایاز صادق کی کامیابی کالعدم قرار دیدی۔ الیکشن ٹربیونل کےجج کاظم ملک نےپی ٹی آئی کےچیئرمین عمران خان اوراسپیکرقومی اسمبلی ایاز صادق کے وکلا کے دلائل سننے کے بعدسترہ اگست کوفیصلہ محفوظ کر لیا تھا جوہفتے کی صبح دس بجےسنایاجاناتھا۔ ٹریبونل نےنوگھنٹے کی تاخیر کے بعدشام سات بجے فیصلہ سنایا۔جس کے تحت حلقے کے انتخابی نتائج کوکالعدم قرار دیتے ہوئے دوبارہ پولنگ کا حکم دیا گیا ہے۔ الیکشن ٹربیونل نے حلقے میں پنجاب اسمبلی کی نشست پی پی ایک سوسنتالیس کے انتخابات کو بھی کالعدم قرار دیتے ہوئے دوبارہ الیکشن کا حکم دیاہے جہاں سے مسلم لیگ نون کے رہنمامیاں محسن لطیف کامیاب ہوئے تھے۔ الیکشن ٹربیونل کا فیصلہ اسی صفحات پر مشتمل ہے جس میں نادرا کی جانب سے پیش کی گئی سیپلیمنٹری رپورٹ بھی مسترد کر دی گئی۔چیرمین تحریک انصاف عمران خان نے ٹربیونل کے فیصلے کوحق کی فتح قرار دیتے ہوئے اپنے وکلا کی ٹیم کومبارکباد دی ہے۔ایاز صادق نے الیکشن ٹریبونل کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ جانے کا اعلان کر تے ہوئے کہا کہ فیصلے پر تحفظات ہیں، دھاندلی کا ذکر کہیں نہیں کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں  پاکستان اورجنوبی افریقہ دوسرا ٹی20میچ آج ہو گا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker