تازہ ترینعلاقائی

سبی:بلوچستان میں ایف سی کی کاوشوں کی بدولت امن قائم ہو رہا ہے،جنرل شیرافگن

سبی( نمائندہ خصوصی محمد طاہر عباس) آئی جی ایف سی میجر جنرل شیر افگن نے کہا کہ بلوچستان میں ایف سی کی کاوشوں کی بدولت امن قائم ہو رہا ہے لیکن اس امن کی بحالی میں عوام قبائلی معتبرین پولیس، اور لیویزکا بھی اہم کردار ہے پہاڑوں پر جانے والے اور بندوق اٹھانے والے اب قومی دھارے میں شامل ہو کر صوبے میں امن کے خواہاں ہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے سبی اسکاؤٹس ہیڈکوارٹر میں سبی ،بولان ،نصیر آباد،جعفرآباد،اور جھل مگسی سے تعلق رکھنے والے قبائلی معتبرین سے بات چیت کرتے ہوئے کیا اس موقع پر کمانڈنٹ سبی اسکاؤٹس بریگیڈےئر سید احسن رضا زیدی ،کرنل احمد رضا، لیفٹینٹ کرنل وقاص ملک، لیفٹنٹ کرنل کاشان، لیفٹینٹ کرنل برکت، میجر سلمان ،میجر آصف، صوبیدار میجر امان اللہ،ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر محمد انور کھیتران، جبکہ قبائلی معتبرین میں الحاج ڈاکٹر جمال مری، الحاج میر صاحب جان مری، میر محمد اسماعیل چھلگری ، حاجی نثار کھوسہ ، برکت علی، اللہ رکھیہ ،ڈسٹرکٹ پریس کلب کے صدر جاوید رند، کے علاوہ دیگر افیسران ،قبائلی معتبرین ، اور صحافیوں کی بڑی تعداد موجود تھی میجر جنرل شیر افگن کی سبی اسکاؤٹس آمد پر سبی اسکاؤٹس کے جوانوں نے گارڈ آف آنر پیش کیا بعد ازاں انہیں بریگیڈےئر احسن رضا زیدی ،ونگ کمانڈرز نے اپنے اپنے علاقوں کے بارے میں بریفنگ دی بعد ازاں آئی جی ایف سی میجر جنرل شیر افگن نے سبی اسکاؤٹس کے جوانوں کے دربار سے خطاب کیامیجر جنرل شیر افگن نے قبائلی معتبرین سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ مچھ سے لیکر ڈیرہ اللہ یار تک کا علاقہ کافی بد امنی کا شکار تھا لیکن ایف سی نے علاقہ معتبرین پولیس، لیویز کی مدد سے ان علاقوں میں امن قائم کرنے کیلئے بیش بہا قربانیاں دی ہیں بلوچستان میں کم و بیش 650جوان ریلوے لائنز اور ہائے ویز پر ڈیوٹیاں سر انجام دیتے ہوئے اور مختلف آپریشنز میں شہید جبکہ 1800سو جوان زخمی ہوئے ہیں انہوں نے کہا کہ پہاڑوں پر جانے والے ہمارے بھائی ہیں ہم کبھی نہیں چاہیں گے کہ ہم انہیں کوئی نقصان پہنچائیں ایف سی کے امن جرگوں کی بدولت اور قبائلی معتبرین کی مدد سے بندوق اٹھا نے والے اب قلم اٹھا کر قومی دھارے میں شامل ہورہے ہیں ہم ان پاکستانی بھائیوں کو گلے سے لگانے کیلئے تیار ہیں جو پہاڑوں سے اترکر قومی دھارے میں شامل ہونا چاہتے ہیں انہوں نے کہا کہ بلوچستان ایک پر امن صوبہ ہے لیکن چند مٹھی بھر عناصر باہر بیٹھ کر صوبہ کا امن خراب کرنا چاہ رہے تھے وہ خود تو اےئر کنڈیشن محلوں میں بیٹھتے ہیں اور ان کے بچے اعلیٰ تعلیمی اداروں میں تعلیم حاصل کررہے ہیں لیکن غریب لوگوں کو اپنے مفادات کیلئے استعمال کررہے ہیں انہوں نے کہا کہ ایف سی کے زیر اہتمام بلوچستان کے مختلف علاقوں میں تعلیمی اداروں کے قیام سے ایک مثبت تبدیلی آرہی ہے کہنے کی بات یہ ہے کہ کتاب کھول کر الف ب پڑھنا نہیں بلکہ اس کے حقیقی معنی کو سمجھا جائے تبھی ہم ترقی کرسکتے ہیں انہوں نے کہا کہ بلوچستان ایک پر امن علاقہ ہے اور یہاں کے لوگ مہمان نواز ہیں بلوچستان کی مہمان نوازی پورے ملک میں مانی جاتی ہے انہوں نے کہا کہ اب اٹھارویں یا انیسویں صدی نہیں بلکہ اب اکیسویں صدی کا دورہ ہے ہر شخص یہ چاہتا ہے کہ وہ ترقی کرے اور اس کے بچے اعلیٰ تعلیم حاصل کرکے ملک و قوم کی خدمت کریں انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں فرنٹےئر کور عوام کے ساتھ ملکر صوبے میں نہ صرف امن بلکہ اسے ترقی کی راہ پر گامزن کرنے میں اپنا بھرپور کردار ادا کررہی ہے اس مقصد کیلئے علاقہ معتبرین اور میڈیا اپنی اپنی ذمہ داریاں پوری کریں تو کوئی وجہ نہیں کہ بلوچستان میں ایک بار پھر امن قائم ہوگا اور یہاں کے لوگ بھی دیگر صوبوں کی طرح ترقی یافتہ دوڑ میں شامل ہونگے

یہ بھی پڑھیں  عمران خان ٹی وی پر مناظرہ کریں ، چوہدری نثار

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker