تازہ ترینفن فنکار

اداکار لہری کو دنیا سے رخصت ہوئے 3 برس بیت گئے

لاہور(نمائندہ شوبز)مزاح کی دنیا میں ڈائیلاگ بولنے میں انفرادیت رکھنے والے نامور کامیڈین اور لیجنڈ اداکار لہری کو مداحوں سے بچھڑے 3 برس بیت گئے۔ سفیر اللہ صدیقی المعروف لہری 1929 میں بھارت میں پیدا ہوئے اور اپنے فلمی کرئیر کا آغاز1956 میں فلم ’انوکھی‘ سے کیا، لہری تنز و مزاح کے جملوں کو بات چیت میں اس طرح استعمال کرتے کہ انہیں دیکھنے والے داد دیئے بغیر نہ رہ پاتے۔ کراچی میں اسٹیج پر ون مین شو کی بنیاد بھی لہری نے ہی ڈالی۔ انکی مشہور فلموں میں دل لگی، تہذیب، انسان بدلتا ہے، دیور بھابھی، زنجیر، جلتے سورج کے نیچے، پھول میرے گلشن، رات کے راہی، فیصلہ، جوکر، آگ، تم ملے پیار ملا، بہادر، نوکر، بہاریں پھر بھی آئیں گی، افشاں اور رم جھم شامل ہیں۔ اس کے علاوہ بھی لہری کی درجنوں فلمیں کامیاب ثابت ہوئیں۔ ان کی آخری فلم ’’دھنک‘‘ 1986 میں ریلیز ہوئی۔اداکار لہری نے ’نگار فلمی‘ سمیت درجنوں ایوارڈ حاصل کیے، اداکار لہری فلمی صنعت کے بزرگ ترین فن کار تھے جو کئی سال تک فالج اور شوگر سمیت کئی پیچیدہ بیماریوں سے لڑتے لڑتے 13 ستمبر 2012 کو دنیا فانی سے کوچ کرگئے۔

یہ بھی پڑھیں  دنیائے ادب کا روشن ستارہ غروب ہوگیا!

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker