پاکستانتازہ ترین

دہشت گرد حملے کی منصوبہ بندی افغانستان میں کی گئی، میجر جنرل عاصم باجوہ

راولپنڈی(نمائندہ خصوصی)بڈھ بیر ائیر بیس پر حملے کی منصوبہ بندی افغانستان سے کی گئی۔ کارروائی ٹی ٹی پی کے ایک گروپ نے کی۔ ترجمان پاک فوج کی بریفنگ، جنرل عاصم باجوہ کے مطابق کوئیک رسپانس کی وجہ سے دہشت گرد پچاس میٹر سے آگے نہ بڑھ سکے۔ دہشت گردوں نے نماز فجر کے وقت نہتے عبادت گاروں کو نشانہ بنایا۔ ترجمان پاک فوج میجر جنرل عاصم باجوہ نے بڈھ بیڑ میں ہونے والے دہشت گرد حملے پر بریفنگ دی۔ جنرل عاصم سلیم باجوہ نے بتایا کہ دہشت گرد کانسٹیبلری کی وردی میں ملبوس تھے جو حساس مقامات تک جانا چاہتے تھے لیکن پاک فوج کے جوانوں نے جرات اور بہادری کا مظاہرہ کرتے ہوئے ان کے ناپاک عزائم کو ناکام بناتے ہوئے محض پچاس میٹر کے دائرے میں محدود کر دیا۔ ڈی جی آئی ایس پی آر نے بتایا کہ حملہ آور افغانستان سے آئے۔ دہشت گرد حملے کی منصوبہ بندی افغانستان میں کی گئی اور انہیں وہیں سے کنٹرول کیا جا رہا تھا۔ حملے میں کالعدم ٹی ٹی پی کا ایک گروپ ملوث ہے۔ پاک فوج کے ترجمان نے واضح کیا کہ پاکستان ایک ذمہ دار ملک ہے جو بے بنیاد الزام تراشی نہیں کرتا۔ حملے کے تانے بانے افغانستان سے ملنے کے ثبوت موجود ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمسایہ ملک کی طرح پٹاخہ چلنے پر بھی من گھڑت الزامات نہیں لگاتے۔ڈی جی آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ دہشت گردوں کی باڈی لینگویج ان کی پریشانی کو ظاہر کر رہی تھی اور وہ بہت زیادہ تناؤ کا شکار تھے۔ فورسز کی جانب سے گھیرے جانے کے بعد وہ گاڑیوں کے پیچھے چھپ رہے تھے۔عاصم باجوہ نے بزدل دشمن اور ان کے سہولت کاروں کو دو ٹوک پیغام دیتے ہوئے کہا کہ دہشت گردوں کے مددگار سن لیں۔ قوم متحد ہے اور یہ جنگ ہم جیت کر رہیں گے۔ اس موقعے پر انہوں نے پوری قوم اور میڈیا کا بھی شکریہ ادا کیا۔

یہ بھی پڑھیں  عید الاضحیٰ کا دوسرا دن، سنت ابراہیمی پر پیروی کا سلسلہ جاری

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker