تازہ ترینعلاقائی

داؤدخیل میں گندگی کے ڈھیروں نے عوام کو جینا حرام کر دیا

داؤدخیل ( ضیانیازی سے )داؤدخیل میں گندگی کے ڈھیروں نے عوام کو جینا حرام کر دیا جگہ جگہ گندگی کے ڈھیروں سے بیماریاں پھیل رہی ہیں لیکن ٹاؤن کمیٹی کا عملہ خواب خرگوش کے مزے لے رہا ہے نئے تعینات سی ا وبلال خان ایک ماہ سے زائد کا عرصہ گزر گیا ہے دفتر نہیں آتا اور اگر کوئی اہل علاقہ کے لوگ فون کریں تو کہتا ہے کہ یہ بلال کا نمبر نہیں ہے لوگ سخت پریشان ہیں محلہ امیر ے خیل ،لمحے خیل ،کے مکینوں اشرف ،احمد دین ،نعمت اللہ ،شیعب خان ،یونس خان ،ارشد و دیگر نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ گرلز ہائی سکول کے گیٹ کے ساتھ لگے گندگی کے ڈھیروں کی وجہ سے جہاں اہل محلہ کے مکین پریشان ہیں وہی بچیوں کو سکول میں آتے ہوئے بھی دشواری کا سامنا ہوتا ہے جبکہ رات کو مچھروں کی وجہ سے سونا بھی محال ہو چکا ہے اور سکول کی دیوار کے ساتھ ریلوے روڈ پر گندگی کے ڈھیروں کی وجہ سے روڈ سے گزرنا مشکل ہو چکا ہے وہی ان گندگی کے ڈھیروں کی وجہ سے کئی جلدی بیماریاں پھیل چکی ہیں اور اب تو اہل محلہ ان گندگی کے ڈھیروں کی وجہ سے ذہینی مریض بن چکے ہیں اور سیوریج کے گٹروں سے ڈھکن غائب ہیں ٹاؤن کمیٹی آفس میں جاتے ہیں تو وہ کہتے ہیں کہ ہمارے پا س گٹروں کے ڈھکن نہیں ہیں ان ڈھکنوں کی وجہ سے کسی بھی وقت کوئی حادثہ ہو سکتا ہے جب سی او ٹاؤ ن کمیٹی داؤدخیل سے بلال خان سے ان کے نمبر 03003338265پر رابطہ کیا تو انہوں نے کہا کہ یہ بلال کا نمبر نہیں ہے آپ نے غلط نمبر پر کال کی ہے جبکہ یہی نمبر بلال خان کے زیر استعمال ہے

یہ بھی پڑھیں  ڈاکٹرعبدالقدیرخان موومنٹ پاکستان کو بہت جلدترقی اورخوشحالی کی طرف لے جائے گی،پیر عابد بودلہ

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker