تازہ ترینعلاقائی

بچہ آہنی راڈ سے پتنگ لوٹتے ہوئے 11 کے وی کی تاروں سے کرنٹ لگنے سے جل گیا

bhawalpurبہاول پور(بیو رو چیف) بہاول وکٹوریہ ہسپتال کی میڈیکل کالونی کے ایک گھر کی چھت پر 11سالہ بچہ آہنی راڈ سے پتنگ لوٹتے ہوئےkv 11کی تاروں سے کرنٹ لگنے سے جل گیا،بچے کو آئی سی یو میں داخل کر دیا گیا جہاں اس کی حالت تشویش ناک بتائی جاتی ہے ۔تفصیل کے مطابق بہاول وکٹوریہ ہسپتال کی میڈیکل کالونی کے ایک گھر کی چھت پر 11سالہ بچہ شمعون آہنی راڈ سے پتنگ لوٹتے ہوئے 11kvبجلی کی تاروں سے کرنٹ لگنے سے بری طرح جھلس گیا ۔گھر پر موجود بچے کے ماموں آصف نے بتایا کہ متعدد بار میپکو واپڈا کو کہنے کے باوجود گھر کی چھت کے قریب سے گزرتی ہوئی 11kvکی بجلی کی تاروں کو دور نہیں کیا گیا اور آج ہمارا بچہ چھت پر کھیلتے ہوئے اس حادثے کا شکار ہوگیا ہے جو کہ سراسر میپکو واپڈا کی نااہلی کو ثبوت ہے ۔تاہم بچے کو بہاول وکٹوریہ ہسپتال کے انتہائی نگہداشت وارڈ میں داخل کر دیا گیا ہے جہاں ڈاکٹروں کے مطابق بچے کی حالت انتہائی تشویش ناک ہے ۔بچے کی والدہ روبینہ جو کہ بی وی ہسپتال ہی میں سینئر سٹاف نرس کے فرائض انجام دے رہی نے میڈیا کو بتا یا کہ حادثے کے وقت ابتدائی طبی امداد اس نے خود ہی گھر پر فراہم کی اور بچے کو شعبہ حادثات منتقل کیا گیا جبکہ ہسپتال ایمپلائی ہونے کے باوجود ہسپتال انتظامیہ کی جانب سے کسی قسم کی کوئی سہولیات فراہم نہیں کیں گیءں اور نہ ہی ایم ایس اور دیگر ہسپتال انتظامیہ کی جانب سے کوئی پوچھنے آیا ہے ۔بچے کے والدین نے وزیر اعظم پاکستان سے میپکو واپڈا کی نااہلی کا فوری نوٹس لینے کی اپیل کی ہے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
error: Content is Protected!!