تازہ ترینعلاقائی

سیاسی عدم استحکام عدالتی فیصلوں سے انحراف کاشاخسانہ ہے ۔شیخ قیصرمحمود

( پریس ریلیز )پاکستان مسلم لیگ (ن) اوورسیز کے مرکزی سیکرٹری جنرل شیخ قیصرمحمود نے کہا ہے کہ ملک میں معاشی و سیاسی عدم استحکام عدالتی فیصلوں سے انحراف کاشاخسانہ ہے۔آئین اورقانون کی حکمرانی پرکسی بھی صورت سمجھوتہ نہیں کیا جاسکتا۔بڑی قربانیوں اورجدوجہد کے بعدپاکستان کوآزاد عدلیہ نصیب ہوئی لہٰذا حکمرانو ں کوعدلیہ کااحترام اوراس کے فیصلوں کوتسلیم کرناہوگا۔ایوان صدر کے آشیربادپرسابق وزیراعظم یوسف رضاگیلانی کوعدالت کے ساتھ ٹکرانااورسوئس حکومت کولیٹرنہ لکھنابہت مہنگاپڑا۔یوسف رضاگیلانی کی اداکاری اورفداکاری کے باوجود لوگ صدرزرداری پرانگلیاں اٹھا رہے ہیں ۔اپنے ایک بیان میں شیخ قیصر محمود نے مزید کہا کہ ارباب اقتدارکی اجتماعی توبہ کاوقت گزرگیا لہٰذا وہ انجام اورسزاکیلئے تیارہوجائیں۔ عوامی عدالت نے صدرزرداری اوران ایک ایک حواری پرفردجرم عائد کردی ،وہ مستعفی ہوکرعدالت کے روبروپیش ہوں۔انہوں نے کہا کہ حکمرانوں نے ایک بار نہیں بلکہ بار بار آئین سے تجاوزکیا ،یہ ایک انتہائی اقدام ہے اگر ان کامحاسبہ نہ کیا گیا توتاریخ ہمیں معاف نہیں کرے گی۔زرداری لیگ والے عدلیہ کوکمزوریاتنہا نہ سمجھیں ،وہ یادرکھیں انصاف اوراحتساب کے معاملے پرپاکستان کے اٹھارہ کروڑ لوگ عدلیہ کے ساتھ ہیں۔انہوں نے کہا کہ عوام کی نگاہوں میں حکمرانوں کاکوئی وقار اوران کی کوئی وقعت نہیں ہے ،اس رسوائی اورپسپائی کے بعدوہ اقتدارچھوڑدیں۔اسمبلیوں کے اندراورباہراپوزیشن پارٹیوں کومتحدہوکربدعنوان حکومت کیخلاف ایک منظم تحریک چلاناہوگی۔انہوں نے کہا کہ میاں نوازشریف جمہوری قوتوں کوایک چھت کے نیچے بٹھانے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔مسلم لیگ کے دھڑے عنقریب میاں نوازشریف کی قیادت میں متحد ہوجائیں گے۔

یہ بھی پڑھیں  تھانہ صدر پتوکی کے ایس ایچ اوکی شراب کشید کرنے والے دس اڈوں کے خلاف کریک ڈاؤن

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker