تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیرو میں غیر معیاری دودھ،گوشت ودیگر خوردونوش کی اشیا سرعام فروخت

بھائی پھیرو(نامہ نگار) بھائی پھیرو میں غیر معیاری دودھ،گوشت ودیگر خوردونوش کی اشیاء بیچنے والوں کے خلاف کارروائی کرنا محض مذاق بن کر رہ گیا، ڈی سی او قصور کالی بھیڑوں کے خلاف کارروائی کرنے کی بجائے میٹنگوں تک محدود،شہر بھر میں دونمبر سے لیکر بارہ نمبر تک خوردو نوش کی اشیاء کی سرعام مہنگے داموں فروخت کا سلسلہ جاری،شہری مختلف موذی بیماریوں میں مبتلا، حاکموں کے حکم ہوا میں چھو منتر شہری کسی مسیحا کے منتظر۔ تفصیلات کے مطابق۔ڈی سی او قصور کے کانوں پر جوں تک نہ رینگنا اس بات کا منہ بولتا ثبوت ہے کہ علاقہ بھائی پھیرو کے بااثر دوکانداروں کے سروں پر دست شفقت رکھنا کیونکہ شہر بھر میں جہاں پر دوکاندار من مرضی کے ریٹ وصول کررہے ہیں وہیں پر یہ دوکاندار شہریوں کو دونمبر سے لیکر بارہ نمبر تک کی خوردونوش کی اشیاء فروخت کررہے ہیں بالخصوص لاغر و بیمار جانوروں کا پانی ملا گوشت،کیمیکل و پانی ملا دودھ،چائے کی پتی،دالیں ،سرخ مرچ وغیرہ یاد ر ہے کہ جہاں پر مافیا انسانیت کادشمن بن کرانسانی صحت سے کھیل کر کالے دھن سے اپنی جیبیں بھر رہا ہے وہیں پر مقامی انتظامیہ بھی مال اکٹھا کرنے کی فکر میں لگی ہوئی ہے شہریوں کی بہت بڑی تعداد نے ہمارے نمائندے سے بات چیت کرتے ہوئے بتایاکہ نہ تو کبھی محکمہ لائیو سٹاک کے کسی افسر نے بھائی پھیرو میں کالی بھیڑوں کے خلاف کوئی کارروائی کرنے کی زحمت گوارہ کی ہے اور نہ ہی کبھی ڈی سی او قصور کی طرف سے کوئی کارروائی عمل میں لائی گئی ہے شہریوں نے کہا کہ اب کوئی مسیحا ہی مافیا کے خلاف کارروائی عمل میں لاسکتا ہے ورنہ ڈی سی او قصور سمیت کوئی افسربھائی پھیرو کے مافیا کے خلاف کارروائی نہیں کرسکتا۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button