شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / پاکستان / چیئرمین نیب نے ڈی جی لاہور کی میڈیا سے گفتگو کا ریکارڈ طلب کرلیا

چیئرمین نیب نے ڈی جی لاہور کی میڈیا سے گفتگو کا ریکارڈ طلب کرلیا

اسلام آباد(بیوروچیف)قومی احتساب بیورو (نیب) نے ڈائریکٹرجنرل (ڈی جی) نیب لاہور کی جانب سے مختلف چینلز پر ’متنازع‘ انٹرویو دینے پر پاکستان الیکڑونک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی (پیمرا) سے تمام ریکارڈنگ طلب کرلی۔نیب کی جانب سے جاری پریس ریلیز میں کہا گیا کہ نیب کے چیئرمین جسٹس (ر) جاوید اقبال نے پیمرا سے ملک کے تمام نشریاتی اداروں پر ڈی جی نیب لاہور سلیم شہزاد کی میڈیا سے بات چیت کا مکمل ریکارڈ طلب کرلیا۔واضح رہے کہ گزشتہ دو روز میں ڈی جی نیب لاہور نے مختلف ٹی وی چینلز کے پروگرامز میں انٹرویو دیا تھا جس میں انہوں نے مسلم لیگ (ن) کے افراد کے خلاف مقدمات پر بات چیت کی تھی۔اس معاملے پر آج اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے قومی اسمبلی سیکریٹریٹ میں ڈی جی نیب لاہور کے انٹرویو کے معاملے پر تحریک استحقاق جمع کرائی گئی۔قومی اسمبلی میں جمع کرائی گئی تحریک استحقاق میں لکھا گیا کہ ڈی جی نیب لاہور سلیم شہزاد نے چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کہ ’رضا مندی‘ کے ساتھ مختلف چینلز کو انٹرویو دیا۔نیب کی جاری کردہ پریس ریلیز میں کہا گیا کہ ’نیب تمام معزز اراکین اسمبلی کا احترام کرتا ہے‘۔انہوں نے کہا کہ ’ڈی جی نیب لاہور کی میڈیا سے بات چیت کا مکمل ریکارڈ طلب کرلیا ہے تاکہ قانون کی روشنی میں کارروائی کی جا سکے‘۔اس حوالے سے مزید کہا گیا کہ ’ریکارڈ میں یہ بھی دیکھنا مقصود ہے کہ کیا (انہوں نے) حقائق کے برعکس کوئی بات کی اور کیا معزز اراکین اسمبلی کا استحقاق مجروح ہوا تو کیسے ہوا‘۔خیال رہے کہ قومی اسمبلی کے اجلاس میں پیش کردہ تحریک استحقاق کے متن میں کہا گیا کہ ’ڈی جی نیب نے جو باتیں کیں اور الزامات لگائے اس سے اراکین اسمبلی کی ساکھ مجروح ہوئی ہے‘، لہٰذا اس معاملے کا نوٹس لے کر کارروائی کی جائے

یہ بھی پڑھیں  پندرہ لاکھ......!!