شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / پاکستان / نواز شریف کوٹ لکھپت جیل منتقل

نواز شریف کوٹ لکھپت جیل منتقل

اسلام آباد(پاک نیوز) سابق وزیراعظم نواز شریف کو واپس کوٹ لکھپت جیل منتقل کردیا گیا ہے۔کوٹ لکھپت جیل میں قید نواز شریف کے علاج معالجے کیلئے سب سے پہلے جناح اسپتال کے ڈاکٹرز پر مشتمل چھ رکنی میڈیکل بورڈ بنایا گیا جس نے سترہ جنوری کو نواز شریف کو اسپتال داخل کرانے کی سفارش کی۔میڈیکل بورڈ کی رپورٹ کے مطابق نوازشریف نہ صرف عارضہ قلب میں مبتلا ہیں بلکہ ان کے گردوں میں کریٹنن کی مقدار بھی معمول سے زائد پائی گئی۔دوسرا میڈیکل بورڈ پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں بنایا گیا جس نے رپورٹ دی کہ نواز شریف کے دل کے نچلے حصے کو خون فراہم کرنے والی شریانوں میں تنگی اور دل کے وال بھی معمول سے زیادہ سخت ہیں۔پی آئی سی کے میڈیکل بورڈ کی سفارش پر ہی تیسرا میڈیکل بورڈ بنا جس میں آرمڈ فورسز انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی، راولپنڈی اور پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے دو، دو ڈاکٹرز شامل تھے۔ اس بورڈ نے بھی نواز شریف کو اسپتال میں زیر علاج رکھنے کی سفارش کی، جبکہ دو فروری کو چوتھا میڈیکل بورڈ تشکیل دے کر نواز شریف کو سروسز اسپتال منتقل کیا گیا۔سروسزاسپتال میں علاج کے دوران نواز شریف کے ٹروپ آئی کی رپورٹ نیگیٹیو اور گردے میں پتھری کی تشخیص ہوئی۔ جبکہ نواز شریف کو پندرہ فروری کو جناح اسپتال دوبارہ داخل کروا کر نیا پانچواں میڈیکل بورڈ تشکیل دیا۔ جس نے مسلم لیگ (ن) کے قائد کی انجیوگرافی تجویز کی۔ مگر نوازشریف نے اسلام آباد ہائیکورٹ سے درخواست ضمانت خارج ہونے بعد جیل منتقلی کو ترجیح دی۔محکمہ داخلہ پنجاب نے میڈیکل بورڈ کی سفارش کے بعد نوازشریف کو دوبارہ جیل منتقل کردیا ہے

یہ بھی پڑھیں  شیشہ کلچر نے اسلام آباد کو لپیٹ میں لے لیا،انتظامیہ تماشائی بن گئی