پاکستانتازہ ترین

مظفرآباد: الیکشن میں نریندر مودی کے یاروں کو شکست ہو گی، سردارعتیق

آزادکشمیر ،مظفرآباد(چیف رپورٹر)صدر آل جموں و کشمیر مسلم کانفرنس و سابق وزیر اعظم آزادکشمیر سردار عتیق احمد خان نے کہا ہے کہ آزادکشمیر کے آمدہ الیکشن میں نریندر مودی کے یاروں کو شکست ہو گی۔حالات بہتری کی طرف جارہے ہیں۔26جون تک انشاء اللہ مزید حلقوں میں اتحادی اور مشترکہ امیدوارسامنے آئیں گے۔ چیف الیکشن کمشنر وفاقی وزراء اور پار ادھر سے آنے والے مشکوک افراد کو روکنے کیلئے ضلعی انتظامیہ کو اختیار دیں اورہدایات جاری کریں کہ ان کوگرفتار کریں اور 21جولائی تک بند رکھیں ۔الیکشن کے دوران لا ء اینڈ آرڈر برقرار رکھنے کیلئے فوج کی خدمات حاصل کی جائیں۔دوجماعتی اتحادکیلئے جماعت کے تمام شعبوں اور ونگز نے صدر جماعت کو اختیار دیا تھا۔ آزادکشمیر کی موجودہ سیاسی صورتحال میں ایک مستحکم نظام قائم کرنے کیلئے مسلم کانفرنس اور تحریک انصاف کا اتحاد ضروری تھا۔ ریاستی تشخص کو مد نظر رکھتے ہوئے ہم نے پی ٹی آئی سے اتحاد کیا۔ پی پی اور ن نے اتنا گند ڈال دیا ۔ ن لیگ غیر ملکی ایجنڈے پر کام کررہی ہے۔ عاشق رسول کو پھانسی دینے والے قابل معافی نہیں ہو سکتے ۔ ان کو ووٹ بھی نہیں دیا جاسکتا۔ نواز لیگ سیاست میں غلاغت کلچر کوجنم دیا۔ شہباز شریف کہتے ہیں کہ ہم مقامی طور پر ایٹمی پروگرام شاید جاری نہ کرکھ سکیں اس کو محفوظ کرنے کیلئے ہندوستان سے دوستی ضروری ہے۔ فوج کے بارے میں ریمارکس دینے پررانا ثناء اللہ کیخلاف مقدمہ چلایا جائے۔ان خیالات کااظہار انہوں نے گزشتہ روز مسلم کانفرنس سٹی مظفرآباد کے زیر اہتمام مشترکہ نامزد امیدوار کی منظم مہم چلانے کے حوالے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ تقریب کی صدارت سٹی صدر شیخ مقصود نے کی۔ اس موقع پر خواجہ فاروق ‘پیر مرتضیٰ گیلانی ‘ دیوان علی چغتائی ‘راجہ ثاقب مجید‘ شیخ مقصود‘ شمیم علی ملک ‘ محترمہ سمیعہ ساجد‘ مختار ہاشمی ‘ قاری صادق ‘ غلام مصطفی شاہ ‘ خوشحال عباسی‘ غیاث الدین کھوکھر‘ فتح یاب ‘ غلام حسن بٹ ‘ عاصم نقوی‘ بشیر گجر ‘ انور میر‘ ملک دل محمد اعوان ‘ غلام رسول شاہ‘ مشتاق قریشی ‘ سردار مظہر اعوان‘ ملک عنایت ‘ خواجہ مقبول وار‘ حاجی اشرف ‘خالد گیلانی ‘ سجادقریشی اور دیگر مقررین نے بھی خطاب کیا۔ اس موقع پر انور میر ‘ بشیر گجر اور حاجی رنگین بٹ پی پی او ر ن کو چھوڑ کر مسلم کانفرنس میں شامل ہوئے جنھیں صدر جماعت نے ہارڈال کر مبارکباد پیش کی۔ خواجہ فاروق نے اپنے خطاب میں کہاکہ میں نے حکومت کی مشیر ی کوٹھکرایا اگر مشیر بن جاتا تو کرپشن کی غلاظت میں حصہ دار بن جاتا۔ ہمیں فخر ہے کہ ہمارا اتحاد ریاست کی سب سے بڑ ی جماعت سے ہوا ہے۔ ہم کرپشن کے خاتمہ کیلئے اکٹھے ہوئے ہیں ۔ انشاء اللہ بیرسٹر سلطان اور سردار عتیق کو ایک بار پھر ریاست کے معاملات درست کرنیکا موقع ملے گا۔فاروق حیدر غیر متوازن ذہن کے آدمی ہیں۔ انھیں وزارت عظمیٰ ملی لیکن نو ماہ بھی نو ماہ بھی نہ سنبھال سکے۔ پھر لوگوں نے کہاکہ’’وزارت عظمیٰ دتی آسی تساں سنبھال ہی نہ سکی تے‘‘ہم کارکنوں کو خیال رکھیں گے۔ اگرمیں آپ کا نمائندہ بن گیا تو تمام مسائل حل کراؤنگا۔ مہاجرین کے مسائل بھی حل کرینگے۔ اس موقع پر سردار عتیق احمدنے مزید کہا کہ نواز لیگ کو مسلم کانفرنس کا متبادل نہیں سمجھتا۔ ہم اصولی اور نظریاتی طور پر مسلم لیگی ہیں۔ ہمیں قائداعظم کا مینڈیٹ حاصل ہے۔ تقسیم برصغیر کے وقت قائداعظم نے 665ریاستوں میں سے صرف کشمیر میں مسلم کانفرنس کو ہی مسلم لیگ کا متبادل قراردیا۔ نواز لیگ نے ہمارے ساتھ اتحاد کی پیشکش کی تھی میں نے نہیں کی۔پاک فوج کا چین سے لے کر جرمنی تک استقبال کیا جارہا ہے۔انہوں نے کارکنان کو ہدایت کی کہ اتحادی امیدواروں کی بڑھ چڑھ کر مہم چلائیں اور ان کو کامیاب بنائیں۔

یہ بھی پڑھیں  گورنمنٹ ہائی سکول چونیاں کا میٹرک رزلٹ 2013 ء شاندار رہا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker